The news is by your side.

Advertisement

امریکہ کا ایل سلواڈورکے2 لاکھ شہریوں کوملک سےنکالنےکا اعلان

واشنگٹن : ٹرمپ انتظامیہ نےاعلان کیا ہے کہ امریکہ میں رہنے اور کام کرنے والے 2 لاکھ ایل سلواڈور کے شہریوں کے پرمٹ منسوخ کردیے جائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق امریکہ نے 2001 میں وسطی امریکہ کے ملک ایل سلواڈور میں زلزلہ آنے کا بعد انسانی بنیادوں پر بنائے گئے پروگرام عارضی پروٹیکٹڈ اسٹیٹس (ٹی پی ایس) کے تحت لوگوں کو یہ پرمٹ دیے تھے۔

ڈیپارٹمنٹ آف ہوم لینڈ سیکورٹی کا منصوبہ ہے کہ وہ ایل سلوا ڈور کے شہریوں کو 9 ستمبر2019 تک کی اجازت دے کہ وہ امریکہ سے نکلنے یا یہاں رہنے کے لیے کوئی قانونی راستہ تلاش کرسکیں۔

ٹی پی ایس کے بغیرایل سلواڈور کے باشندوں کو بہت مشکلات کا سامنا ہوگا انہیں گرفتار اور ملک بدر کیا جاسکتا ہے۔

خیال رہے کہ ٹی پی ایس پروگرام 1990 میں تشکیل دیا گیا تھا اور اس کے تحت متعدد ممالک سے آئے ہوئے پناہ گزین ملک میں قانونی طور پر رہ اور کام کرسکتے تھے۔

یاد رہے کہ ٹرمپ انتظامیہ نے پہلے ہی ہیٹی اور نکاراگوا کے ہزاروں شہریوں پر سے ٹی پی ایس کا تحفظ اٹھا لیا تھا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں