The news is by your side.

Advertisement

خلیج عمان میں امریکی مفادات کا تحفظ، ٹرمپ کا عالمی فوجی اتحاد بنانے کا اعلان

واشنگٹن: امریکا نے خلیج عمان اور یمن کے سمندر سے تیل سپلائی کرنے والے آئل ٹینکرز اور حساس تنصیبات کے تحفظ کے لیے عالمی فوجی اتحاد بنانے کا اعلان کردیا۔

بین الاقوامی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ایران اور یمن کے اطراف سمندر کی حفاظت کے حوالے سے امریکا نے غور شروع کیا تھا اس حوالے سے اب باقاعدہ فوجی اتحاد بنانے کا اعلان کردیا گیا۔

امریکی فوجی جنرل جوزف ڈنفرڈ کا کہنا تھا کہ ایران اور یمن کے اطراف سمندرکی حفاظت کے لیے اتحاد بنانا چاہتے ہیں تاکہ تیل کی ترسیل کرنے والے آئل ٹینکرز اور فوجی تنصیبات کی حفاظت کو یقینی بنایا جائے۔

اُن کا کہنا تھا کہ امریکا کمانڈ اینڈ کنٹرول کے عمل کے لیے جلد بحری جہاز فراہم کرےگا تاکہ امریکا تیل فراہم کرنے پر مامور بحری جہازوں کے درمیان گشت کو یقینی بنایا جائے جبکہ منصوبے کے تحت دوسرے مرحلے میں اتحادی ممالک کو کشتیاں فراہم کی جائیں گی۔

مزید پڑھیں: تیل بردار جہازوں پر حملہ بین الاقوامی سلامتی کے لیے سنگین خطرہ ہے: سلامتی کونسل

انہوں نے بتایا کہ امریکاکی مختلف ممالک سےبات چیت جاری ہے، تقریباً سب ہی منصوبے کی حمایت پر آمادہ ہیں اور رائے عامہ بحال کرنے کی کوششیں بھی تیز کردی گئیں۔

جنرل جوزف ڈنفرڈ کا کہنا تھا کہ امریکا خلیجی خطے میں جہاز رانی کی آزادی کو یقینی بنانا چاہتا ہے، اس حوالے سے خدو خال مرتب کرلیے گئے کیونکہ بین الاقوامی فوجی اتحاد کا قیام ناگزیر ہوگیا۔

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں تیل کی فراہمی کرنے والے سعودی بحری جہازوں پر ڈرون کے ذریعے راکٹ فائر کیا گیا تھا جس کے بعد امریکا نے خلیج عمان میں بحری بیٹرا تعینات کیا جبکہ ٹرمپ انتظامیہ نے قطر میں بھی جنگی طیاروں کی دو کھیپ اور فوجی کیمپ تیار کرلیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں