The news is by your side.

Advertisement

ترجمان وائٹ ہاؤس سارہ سینڈرز کا عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ

واشنگٹن: امریکی وائٹ ہاؤس کی ترجمان سارہ سینڈرز نے عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ کرلیا، صدر ٹرمپ نے تصدیق کردی۔

تفصیلات کے مطابق وائٹ ہاؤس کی ترجمان اس ماہ کے آخر میں اپنے عہدے سے مستعفی ہوجائیں گی، تاہم کوئی حتمی تاریخ سامنے نہیں آئی۔

امریکی میڈیا کے مطابق ملکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس ماہ کے آخر میں سارہ سینڈرز عہدہ چھوڑ دیں گی، مجھے امید ہے کہ وہ آرکنساس کے گورنر کیلئے میدان میں آئیں گی۔

سارہ سینڈرز کے والد آرکنساس کے گورنر رہ چکے ہیں، سارہ سینڈرز مستقبل میں گورنر کا انتخاب لڑنے کا ارادہ رکھتی ہیں، ماہرین نے خیال ظاہر کیا ہے کہ وہ انتخابات لڑنے کے پیش نظر عہدے سے مستعفی ہوں گی۔

سارہ سینڈرز کا کہنا تھا کہ میرے لئے سب سے اہم کام اپنے بچوں کی اچھی ماں بن کر دکھانا ہے، اب اپنے گھر واپس جانے کا وقت آگیا ہے۔

خیال رہے کہ سارہ سینڈرز کے مستعفی ہونے کی کوئی معقول وجہ سامنے نہیں آئی، تاہم ٹرمپ کے منصب سنبھالنے کے بعد سے اب تک کئی عہدیدار استعفیٰ دے چکے ہیں۔

صدارتی ایگزیکٹوآرڈر کے ذریعے ایمرجنسی لگائی جاسکتی ہے‘ سارہ سینڈرز

امریکی صدر کے احکامات، بیانات اور بعض اوقات ان کا توہین آمیز رویہ امریکی عہدیداروں کے مستعفی ہونے کا باعث بنا ہے، جبکہ بہت سے امریکی سیاستدان ٹرمپ کو صدارت کے عہدے کے لائق نہیں سمجھتے۔

یاد رہے کہ جولائی 2017 میں وائٹ ہاؤس کے ترجمان اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی قانونی ٹیم کے رکن شون اسپائسر نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں