The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ کا فیصلہ عقل اور آئین دونوں سے متصادم ہے: صدر بائیڈن

واشنگٹن: امریکی صدر نے اسلحے کی اجازت سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلے کو عقل اور آئین سے متصادم قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق صدر جو بائیڈن نے امریکی سپریم کورٹ کے فیصلے پر بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ عقل اور آئین دونوں سے متصادم ہے، فیصلے سے شدید مایوسی ہوئی۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلے سے امریکی صدر بائیڈن کی گن کنٹرول کی کوششوں کو بڑا دھچکا پہنچا ہے، امریکی سپریم کورٹ نے عوامی مقامات پر بھی اسلحہ لے جانے کی اجازت دے دی ہے۔

امریکی سپریم کورٹ نے اسلحہ ساتھ رکھنے پر پابندی ختم کر دی

امریکی سپریم کورٹ نے اپنے حکم میں کہا کہ شہری اپنے دفاع کے لیے عوامی مقامات پر اسلحہ لے جا سکتے ہیں، اس فیصلے کے حق میں سپریم کورٹ کے 6 قدامت پسند ججوں نے ووٹ دیا، جب کہ گن کنٹرول کے حامی سپریم کورٹ کے 3 لبرل ججز نے فیصلے کی مخالفت کی۔

امریکی صدر جو بائیڈن نے اس پر رد عمل میں کہا کہ انھیں سپریم کورٹ کے فیصلے سے شدید مایوسی ہوئی، یہ فیصلہ عقل اور آئین دونوں سے متصادم ہے، اس پر سب کو تشویش ہونی چاہیے۔

بائیڈن کا کہنا تھا کہ شہری گن سیفٹی کے لیے آواز بلند کریں، امریکی شہریوں کی زندگیاں داؤ پر لگی ہوئی ہیں۔ یاد رہے کہ امریکا میں گزشتہ روز حکومت اور اپوزیشن کا گن کنٹرول کے لیے قانون سازی پر اتفاق ہوا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں