The news is by your side.

Advertisement

محرم کے دوران ایس او پیز پر عملدر آمد 200 فیصد یقینی بنایا جائے: عثمان بزدار

لاہور: وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کا کہنا ہے کہ محرم کے دوران کرونا وائرس ایس او پیز پر عملدر آمد 200 فیصد یقینی بنایا جائے جبکہ فرقہ واریت کے سدباب کے لیے بھی ممکنہ اقدامات کیے جائیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیر صدارت ایپکس کمیٹی کا خصوصی اجلاس ہوا، اجلاس میں محرم الحرام کے دوران سیکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا گیا۔

وزیر اعلیٰ کا کہنا تھا کہ محرم میں ضابطہ اخلاق پر عمل 200 فیصد یقینی بنایا جائے، جلوسوں اور مجالس میں کرونا وائرس کی ایس او پیز کو ملحوظ خاطر رکھا جائے۔ کرونا وائرس پر جلد مکمل قابو پا لیں گے لیکن احتیاط بے حد ضروری ہے۔

انہوں نے کہا کہ مجالس کے دوران ماسک کی پابندی لازمی کی جائے، ایس او پیزکی خلاف ورزی کرونا وائرس کے پھیلاؤ کا سبب بن سکتی ہے، جلوسوں کے روٹ پر تجاوزات کا خاتمہ یقینی بنایا جائے۔

وزیر اعلیٰ کا مزید کہنا تھا کہ محرم میں قانون کی عملداری کو ہر صورت یقینی بنایا جائے، فرقہ واریت کے سدباب کے لیے ممکنہ اقدامات کیے جائیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز حکومت پنجاب نے محرم الحرام کے حوالے سے ایس او پیز جاری کیے ہیں جن میں دوران مجالس موقع پر ہاتھ دھونے کا انتظام اور سینی ٹائزر ہونا لازم قرار دیا گیا ہے۔

ایس او پیز کے مطابق شرکا کسی بھی چیز بالخصوص سبیلوں میں استعمال ہونے والے برتن، ٹرالی، دروازوں اور دیگر اشیا کو چھونے کے بعد ہاتھ اچھی طرح دھوئیں اور دوران مجالس موقع پر ہاتھ دھونے کا انتظام، سینی ٹائزر، ٹشو اور کوڑے دان کا ہونا لازم ہے۔

پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر سیکریٹری کا کہنا ہے کہ جس ہال میں مجلس کا اہتمام کیا گیا ہو وہاں کوڑا بشمول ماسک کے تدارک کے لیے ڈھکن والے کوڑے دان لازمی ہوں، بلا ضرورت کسی بھی چیز کی سطح کو پکڑنے یا چھونے سے پرہیز کیا جائے۔

نوٹیفیکیشن میں کہا گیا ہے کہ مجالس، جلوس اور دیگر سرگرمیوں کے دوران شرکا کے پاس ہر وقت سینی ٹائزر ہونا لازم ہے، محرم الحرام کے جلوس اور ریلیوں میں تمام شرکا اور عزاداران کا ماسک پہننا لازمی ہے جبکہ مجالس میں صرف ان ذاکرین کو بیان کی اجازت ہوگی جن کا کرونا وائرس ٹیسٹ منفی ہو۔

Comments

یہ بھی پڑھیں