The news is by your side.

Advertisement

عزیر بلوچ ایک اور مقدمے میں بری

انسداددہشتگردی کی عدالت میں پراسیکیوشن عزیربلوچ کے خلاف جرم ثابت کرنے میں ناکام ہوگیا جس کے بعد اے ٹی سی نے مقدمے میں عزیر بلوچ اور امین بلیدی کو بری کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق اےٹی سی نے شہر میں ہڑتال کے دوران بس جلانے کے مقدمےکا فیصلہ سناتے ہوئے ملزمان کی رہائی کا پروانہ جاری کردیا۔

کراچی: مقدمے میں مفرور حبیب جان سمیت 7 افراد کے تاحیات وارنٹ جاری کر دیے گئے۔ مفرور ملزمان میں شیرازکامریڈ، راشد بنگالی، جبارجھینگو، ستار پیڑا ،غفار نیازی اور جمشید شامل ہیں۔

وکیل عزیر بلوچ عابد زمان ایڈووکیٹ نے کہا کہ استغاثہ ملزمان کیخلاف کوئی شواہد پیش نہیں کرسکا البتہ 7 سے زائد گواہان پیش کئے گئے لیکن ملزمان کےخلاف کسی نے بیان ریکارڈ نہیں کرایا۔

 عزیر بلوچ قتل کے ایک اورمقدمے میں بری

پولیس کے مطابق ملزمان نے 24 اپریل 2012 کو ہڑتال کےدوران بغدادی میں جلاؤ گھیراؤ کیا، ہنگامہ آرائی کے دوران منی بس کو بھی نذر آتش کیا گیا۔

عدالتی فیصلے میں کہا گیا ہے کہ استغاثہ ملزمان کے خلاف جرم ثابت کرنے میں ناکام رہا ہے اور ملزمان کو بری کیا جاتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں