The news is by your side.

Advertisement

تعطیلات میں بچوں کے وزن بڑھنے کی شرح میں اضافہ

امریکی ماہرین کا کہنا ہے کہ گرمیوں کی تعطیلات کے دوران بچوں میں موٹاپے کی شرح بڑھ جاتی ہے۔ یہ امکان اس وقت کم ہوتا ہے جب بقیہ سارا سال بچے اپنے اسکول اور دیگر نصابی سرگرمیوں میں مصروف رہتے ہیں۔

امریکی ریاست کیلی فورنیا میں کی جانے والی اس تحقیق کے لیے مختلف اسکولوں کے 18 ہزار بچوں کا جائزہ لیا گیا۔

ماہرین کے مطابق گرمیوں کی تعطیلات میں بچوں کے موٹاپے میں مبتلا ہونے کے امکان میں لگ بھگ 12 فیصد اضافہ دیکھا گیا۔ ماہرین نے یہ بھی دیکھا کہ جو بچے موٹاپے کا شکار تھے وہ گرمیوں کی چھٹیوں کے دوران ہی اس علت کا شکار ہوئے۔

kid-2

ماہرین کا کہنا ہے کہ اس کی وجہ یہ ہے کہ چھٹیوں کے علاوہ دیگر پورا سال بچے ایک طے شدہ شیڈول کے مطابق چلتے ہیں جس میں ان کے کھانے پینے، آرام کرنے، ورزش کرنے اور کھیلنے کے اوقات مقرر ہوتے ہیں۔ کم ہی بچے اس شیڈول سے انحراف کرتے ہیں۔

اس کے برعکس تعطیلات میں ان معمولات میں تبدیلیاں آجاتی ہیں اور بچے کئی بے قاعدہ سرگرمیوں میں مشغول ہوجاتے ہیں جیسے دیر تک ٹی وی دیکھنا، کم سونا، کم ورزش کرنا، اور بے وقت کھانا۔

ماہرین کے مطابق بچوں کو موٹاپے سے بچانے کے لیے تعطیلات کے دوران بھی ورزش کو ان کے معمول میں شامل رکھا جائے اور انہیں کھلی فضا میں کھیلے جانے والے کھیلوں کے لیے ترغیب دی جائے۔

مزید پڑھیں: باغبانی کے بچوں پر مفید اثرات

کچھ عرصہ قبل اسی قسم کی ایک تحقیق بالغ افراد پر بھی کی گئی تھی جس میں دیکھا گیا کہ تعطیلات کے دوران جان لیوا دل کے دورے کا امکان بڑھ جاتا ہے۔ یہ امکان عام دنوں کے مقابلے میں تعطیلات کے دنوں میں زیادہ ہوتا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ تعطیلات میں موت کا شکار ہونے کی وجہ بھی معمولات میں تبدیلی ہے۔ چھٹیوں کے دوران صحت اور غذا کا خیال نہ رکھنا، ورزش سے گریز اور الکوحل کا زیادہ استعمال عام دنوں کے مقابلے میں زیادہ جان لیوا بیماریوں کا شکار کر سکتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں