The news is by your side.

Advertisement

ویکسی نیشن کے حوالے سے جرمنی کا بڑا اقدام

برلن: جرمنی میں لوگوں کو کرونا وائرس سے بچاؤ کی مکس ویکسین لگوانے کی اجازت دے دی گئی، حکام کے مطابق اگر لوگ چاہیں تو پہلی ڈوز کے بعد کسی بھی کمپنی کا ایم آر این اے ویکسین کی بوسٹر ڈوز بھی لگوا سکتے ہیں۔

بین الاقوامی ویب سائٹ کے مطابق جرمنی نے اپنے لوگوں کو عمر کے حساب سے کرونا سے بچاؤ کی مکس ویکسین لگوانے کی اجازت دے دی۔

دنیا کے متعدد ممالک میں اس وقت ایک ہی طرح کی ویکسین کے پہلے اور دوسرے ڈوز لگوائے جا رہے ہیں لیکن امریکا، برطانیہ اور فرانس جیسے ممالک میں حکومت نے لوگوں کو مرضی کے مطابق کچھ عرصے بعد دوسری ویکسین لگوانے کی اجازت بھی دے رکھی ہے۔

تاہم اب تک کوئی ایسا ملک نہیں تھا جس نے لوگوں کو بیک وقت مکس ویکسین لگوانے کی اجازت دی ہے لیکن اب جرمنی نے اپنے شہریوں کو بیک وقت مکس ویکسی نیشن کی اجازت دے دی۔

جرمنی کے ویکسی نیشن سے متعلق حکومتی ادارے سٹیکو نے کہا ہے کہ جن لوگوں نے کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے پہلی ڈوز ایسٹرازینیکا کی لگوائی ہو، وہ چاہیں تو اپنی عمر کے حساب سے دوسری ڈوز موڈرنا یا فائزر کی بھی لگوا سکتے ہیں۔

ادارے کے مطابق اگر لوگ چاہیں تو پہلی ڈوز کے بعد کسی بھی کمپنی کا ایم آر این اے ویکسین کا بوسٹر ڈوز بھی لگوا سکتے ہیں۔

ایم آر این اے ویکسین کو بوسٹر ڈوز کہا جاتا ہے جو براہ راست بیماری کو نہیں روکتیں بلکہ وہ انسان کے مدافعتی نظام کو مضبوط بنانے سمیت خلیات میں پروٹین کی پیداوار کو یقینی بناتی ہیں۔

جرمن حکومت کے مطابق لوگ چاہیں تو فائزر اور موڈرنا کی پہلی ڈوز کے بعد ایسٹرازینیکا کی دوسری ڈوز لگوائیں یا چاہیں تو ایم آر این اے ویکسین کی بوسٹر ڈوز لگوائیں۔

حکومتی ادارے کے مطابق تازہ تحقیقات سے معلوم ہوتا ہے کہ مکس ویکسی نیشن کا اثر دیرپا اور پائیدار ہوتا ہے اور ایسا عمل مختلف طرح کے کرونا وائرسز سے بھی محفوظ رکھتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں