The news is by your side.

Advertisement

بچوں کی جان داؤ پرلگائیں گے،سی این جی سلنڈرزنہیں ہٹائیں گے، اسکول وینزمالکان کی ڈھٹائی

کراچی: اسکول وینز مالکان نے ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہڑتال کردی ، مالکان کا کہنا ہے کہ بچوں کی جان داؤ پرلگائیں گے،سی این جی سلنڈرزنہیں ہٹائیں گے جبکہ والدین نے  حکومت سے وین ڈرائیورز کے خلاف ایکشن لینے کامطالبہ کردیا ۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں گاڑیوں کی چیکنگ پر اسکول وین ڈرائیورز ڈھٹائی پر اتر آئے اور ہڑتال کردی، اسکول وینزمالکان کا سلنڈرز نکالنے کے خلاف پریس کلب پر احتجاج جاری ہے، مظاہرین نے پلے کارڈز اٹھا رکھے ہیں ، جس پر بچوں کی جان داؤ پرلگائیں گے ، گاڑیوں سےسلنڈرنہیں ہٹائیں گے کے نعرے درج ہیں۔

کراچی پریس کلب کے اطراف پولیس اور رینجرز کی نفری موجود ہیں ، پولیس نے وارننگ دی ہے کہ پرامن احتجاج کریں،حدسے تجاوز پر لاٹھی چارج ہوگا۔

دوسری جانب وین ڈرائیورز کے احتجاج کے باعث بچے رل گئے اور صبح اسکول نہ جاسکے، کچھ بچوں کووالدین موٹرسائیکل یا رکشے پر اسکول چھوڑ کرآئے ، والدین نےحکومت سے وین ڈرائیورز کے خلاف ایکشن لینے کامطالبہ کردیا ہے۔

گذشتہ روز اسکول وین ڈرائیورز کا کہنا تھا کہ گاڑیاں پیٹرول پر نہیں چلاسکتے ، گاڑیوں میں سلنڈر بم لگاکر گھومیں گے مگر حکومت کی نہیں مانیں گے جبکہ آج صدر لکی اسٹار سے ریلی نکالنے کا اعلان بھی کیا اور ٹریفک پولیس پر ہراساں کرنے کا الزام بھی لگایا۔

وین ڈرائیور ایسوسی ایشن نے وینز سے سی این جی اور ایل پی جی نکالنے سے انکار کرتے ہوئے  ہڑتال کا اعلان کیا تھا اور کہا تھا کہ گارنٹی ہے پیٹرول اور ڈیزل کی گاڑی میں آگ نہیں لگ سکتی، حکومت ڈھائی لاکھ روپے دے تو ہر گاڑی ڈیزل پر کرالیں گے۔

مزید پڑھیں : اسکول وین ایسوسی ایشن کا ہڑتال کا اعلان

خیال رہے اسکول کی گاڑیوں میں سی این جی اور ایل پی جی سلنڈر لگانے پر پابندی ہے اور سپریم کورٹ آف پاکستان کے حکم پر اسکول وین میں سلینڈر استعمال کرنے کیخلاف کریک ڈاون کا سلسلہ جاری ہے۔

واضح رہے شہر بھر میں روزانہ سیکڑوں بچے وین کے ذریعے اسکول جاتے ہیں، 6 جنوری کو اورنگی ٹاؤن میں اسکول وین میں آگ لگنے کا واقعہ پیش آیا تھا، جس میں 14 کے قریب بچے جھلس کر زخمی ہوئے تھے۔

بعد ازاں پولیس نے وین ڈرائیور رشید کو سہراب گوٹھ کے علاقے سے گرفتار کر کے زخمی طالب علم کے والد کی مدعیت میں غفلت، لاپرواہی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں