The news is by your side.

Advertisement

آئندہ 4ماہ بعد پاکستان کے حالات بھارت جیسے ہو سکتے ہیں ، ماہرین صحت نے خطرے کی گھنٹی بجادی

لاہور : وی سی یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز پروفیسر جاوید اکرم نے خطرے کی گھنٹی بجا دی اور کہا کورونا کی آئندہ لہر پہلی لہر سے زیادہ خطرناک ہو گی احتیاط نہ کی گئی تو آئندہ 4ماہ بعد حالات بھارت جیسے ہو سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وی سی یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز پروفیسر جاوید اکرم نے کورونا کی آئندہ لہرخطرناک ہونے کا عندیہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی آئندہ لہر پہلی لہر سے زیادہ خطرناک ہو گی، کورونا کےجوحالات بھارت میں ہوں وہی 4ماہ بعد پاکستان میں ہوتےہیں، احتیاط نہ کی گئی تو آئندہ 4ماہ بعد حالات بھارت جیسے ہو سکتے ہیں۔

پروفیسر جاوید اکرم کا کہنا تھا کہ لوگ اس مرتبہ عید سادگی سے منائیں، کورونا موجودہ لہر میں لوگ پہلے سےکئی گنا زیادہ متاثر ہورہے ہیں اور لوگوں کوایک سے دوسرے کو ایفکٹ کرنے کی طاقت زیادہ ہے۔

وی سی یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز نے کہا کہ کورونا وائرس کے 9 اقسام اس وقت لوگوں کو متاثر کر رہی ہیں، برطانیہ سےآنے والاوائرس لوگوں کو سب سے زیادہ متاثر کر رہاہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کورونا کی موجودہ لہر میں بچے بھی زیادہ متاثر ہو رہے ہیں، وائرس کی پہلی لہرنے بچوں کومتاثر نہیں کیا ، خدا کرے کہ پاکستان میں بھارتی اسٹرین نہ آئے۔

کورونا ویکسین کے حوالے سے پروفیسر جاوید اکرم نے مزید بتایا کہ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز میں ویکسین کا تیسرا ٹرائل جاری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں