The news is by your side.

Advertisement

میرا بھارت مہان کہنے میں‌ شرم محسوس ہوتی ہے، بھارتی مصنفہ

نئی دہلی : بھارتی مصنفہ نے کہا کہ کشمیریوں کی آواز دنیا کو سنانے والے صحافیوں کو بھارتی فورسز کی دہشتگردی کا سامنا، خواتین صحافیوں کو بھی ہراساں کیا جا رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق بھارت کی نامور مصنفہ اور لکھاری ارون دھتی رائے نے کہاہے کہ بھارت کو مہان کہتے ہوئے شرم محسوس ہوتی ہے کیونکہ اس ملک کی سچائی مقبوضہ کشمیر کی صورت میں ہمارے سامنے موجود ہے۔

بھارتی شہر جالندھر میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے بھارتی دانشور ارون دھتی رائے نے اپنے ملک کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ ہم خاموش تماشائی بن کر ظلم ہوتا دیکھ رہے ہیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق انتہا پسند مودی نے تاریخ میں ظلم کی گھناونی مثال قائم کر دی ہے، کشمیریوں کو انہی کی زمین پر قید کیے 3 ماہ کا عرصہ گزر گیا جس سے وادی میں قحط کی صورت حال پیدا ہوگئی ہے۔

مقبوضہ وادی میں کاروبار اور تعلیمی ادارے بند پڑے ہیں، کشمیری معیشت ٹھپ ہوچکی اور ہزاروں طلبہ کا مستقبل خطرے میں پڑ چکا ہے۔

مقبوضہ جموں و کشمیر ذرائع نقل وحمل اور ہر طرح کے مواصلاتی رابطے منقطع ہیں جس سے شہری گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے ہیں۔

کشمیریوں کی آواز دنیا کو سنانے والے صحافیوں کو بھارتی فورسز کی دہشتگردی کا سامنا ہے اور خواتین صحافیوں کو بھی ہراساں کیا جا رہا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں