The news is by your side.

متنازع ایکٹ کے خلاف احتجاج، بھارتی اداکارہ پر وحشیانہ تشدد، گرفتارکرلیا گیا

نئی دہلی: مسلم مخالف متنازع شہریت بل کے خلاف احتجاج کرنے والی بھارتی اداکارہ کوپولیس تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد گرفتارکرلیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق بھارتی فلم ساز میرا نائرنے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پراے سوٹ ایبل بوائے فلم کی اداکارہ صدف جعفر کی گرفتاری پرردعمل دیتے ہوئے کہا کہ یہ ہمارا بھارت ہے جہاں پر امن احتجاج کرنے پر اداکارہ کو گرفتارکرلیا گیا ہے۔

فلم ساز میرا نائر نے شہریوں سے اپیل کی کہ وہ صدف جعفر کی رہائی کے مطالبے میں ان کا بھرپور ساتھ دیں۔

واضح رہے کہ صدف جعفر فلم اورتھیٹر میں کام کرنے کے ساتھ ساتھ اترپردیش میں کانگریسکی ترجمان، ٹیچر اور سماجی رہنما بھی ہیں۔

Posted by Sadaf Jafar on Thursday, December 19, 2019

فیس بک پرلائیوویڈیو میں اداکارہ کی آواز سنائی دی جس میں وہ خواتین اہلکاروں سے کہہ رہی ہیں کہ پتھراؤ روک دیں۔

دوسری جانب ایس ایچ او حضرت گنج پولیس اسٹیشن ڈی پیاوکشواہا کا کہنا ہے کہ صدف جعفر کو ان مظاہرین کے ہمراہ گرفتار کیا گیا، ان پر الزام ہے کہ انہوں نے حکومت مخالف نعرے لگائے انہیں جیل بھیج دیا گیا ہے اوران کے خلاف شواہد موجود ہیں۔

اداکارہ صدف جعفرکی بہن ناہید روما نے پولیس کے الزامات تردید کرتے ہوئے کہا کہ صدف مظاہرے میں نعرے بازی کررہی تھیں اورپولیس کو پتھراؤ سے روک رہی تھیں۔

یاد رہے کہ بھارت میں مسلم مخالف سٹیزن ایکٹ کے خلاف احتجاجی مظاہرے شدت اختیارکرگئے ہیں، پولیس سے جھڑپوں میں اب تک 23 افراد جاں بحق اور متعدد گرفتار ہوچکے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں