The news is by your side.

Advertisement

وفاقی وزیر طارق بشیر چیمہ اور پی ٹی آئی رکن اسمبلی نذیر چوہان میں تلخ کلامی

لاہور: وفاقی وزیر طارق بشیر چیمہ اور تحریک انصاف کے رکن اسمبلی نذیر چوہان کے درمیان تلخ کلامی کی فوٹیج منظر عام پر آگئی۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر طارق بشیر چیمہ اور پی ٹی آئی رکن اسمبلی میں سخت جملوں کا تبادلہ ہوا جس کے بعد وفاقی وزیر رکن پی ٹی آئی کے رویے سے ناراض ہوکر چلے گئے۔

نذیر چوہان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ طارق بشیر چیمہ وفاقی کالونی کے دورے پر آئے تھے، مسائل حل کرنے کا مطالبہ کیا۔

نذیر چوہان کا کہنا تھا کہ طارق بشیر چیمہ سے کہا کہ وفاقی کالونی میرا حلقہ ہے، غریب ملازمین کے مسائل حل کیے جائیں، وفاقی کالونی میں لوگ سیوریج ملا پانی پی رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ بل تنخواہوں سے کاٹ لیا جاتا ہے، مسائل بھی حل کیے جائیں، طارق بشیر چیمہ مسائل حل کیے بغیر ناراض ہوکر چلے گئے۔

نذیر چوہان وزیر صحت سے بھی الجھ پڑے

وفاقی وزیر سے تلخ جملوں کے تبادلے کے بعد پارلیمانی سیکریٹری نذیر چوہان وزیر صحت سے بھی الجھ پڑے، نذیر چوہان نے دفتر، اختیار نہ ملنے پر پنجاب اسمبلی میں واویلا مچادیا۔

نذیر چوہان کا کہنا تھا کہ میں کسی کے ناکردہ گناہوں کا جواب اسمبلی میں نہیں دینا چاہتا، صحت جیسے اہم معاملے پر کیا جواب دوں، مجھے بحیثٰت پارلیمانی سیکریٹری کا دفتر ہی الاٹ نہیں ہوا ہے۔

پارلیمانی سیکریٹری کا کہنا تھا کہ چند دن پہلے پارلیمانی سیکریٹری صحت مقرر ہوا ہوں، یاسمین راشد کے پاس بہت وقت ہے خود معاملات دیکھ رہی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں