The news is by your side.

Advertisement

ایم کیوایم پر تشدد: ‘مجبوری میں اقدام اٹھایا، کوئی زخمی ہوا تو معذرت’

وزیر اطلاعات سندھ سعید غنی نے کراچی میں ایم کیو ایم پاکستان کے مظاہرین پر پولیس تشدد پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ مجبوری میں اقدام اٹھانا پڑا ہے اگر کوئی زخمی ہوا تو معذرت خواہ ہوں۔

ایک بیان میں سعید غنی نے کہا کہ پی پی کبھی بھی پرامن احتجاج کیخلاف ایکشن کےحق میں نہیں رہی ایم کیوایم سے بات چیت پریس کلب جانےکیلئےہوئی تھی انہوں نے اپنے احتجاج کا روٹ تبدیل کیا اور وزیراعلیٰ ہاؤس آئے۔

سعیدغنی نے کہا کہ جماعت اسلامی کادھرنابھی جاری ہےان پرتشددنہیں کیاگیا، ایم کیوایم کوکہا وزیراعلیٰ ہاؤس کے سامنے آپ کا احتجاج ریکارڈ ہو گیا اب آپ پریس کلب چلےجائیں لیکن وہ نہیں گئے ہمیں مجبوری میں اقدام اٹھانا پڑا، کوئی زخمی ہواتومعذرت خواہ ہوں۔

وزیراعلیٰ ہاؤس پر ایم کیو ایم کے مظاہرین پر پولیس ٹوٹ پڑی

ان کا کہنا تھا کہ پی ایس ایل کےکھلاڑی وزیراعلیٰ ہاؤس سےمتصل ہوٹلوں میں ہیں ہائی الرٹ کی جگہ پردوتین ہزار لوگ جائیں کیااچھاپیغام جائے گا؟ ایم کیوایم کو کہا یہاں سےچلےجائیں وہ جانے کو تیار نہیں تھے۔

واضح رہے کہ وزیراعلیٰ ہاؤس پر ایم کیو ایم پاکستان کی جانب سے دھرنا دیا گیا تو مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے پولیس نے شیلنگ و لاٹھی چارج کیا جس کے نتیجے میں متعدد مظاہرین زخمی ہوگئے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں