The news is by your side.

’کتابوں کی بو سے الرجی‘ بچے کی بیماری کی حقیقت سامنے آگئی

چین میں بچے نے ہوم ورک کرنے سے بچنے کے لیے بہانہ بنایا لیکن پکڑا گیا۔

ساؤتھ چائنا مارننگ پوسٹ کے مطابق بچے کے بہانا بنانے کی ویڈیو آن لائن شیئر کیے جانے کے بعد وائرل ہوگئی۔ویڈیو میں 11 سالہ  لڑکا آنسو بہاتے ہوئے ہوم ورک کرنے سے ‘الرجی’ ہونے کا ڈرامہ کر رہا ہے۔

مشرقی چین کے صوبے جیانگ سو سے تعلق رکھنے والا پرائمری فائیو کا طالب علم بنیادی طور پر اپنی ماں کو یہ کہہ کر اپنے ہوم ورک سے بچنے کی کوشش کر رہا تھا کہ اسے کتاب کی بو سے الرجی ہے جس کی وجہ سے وہ رونا نہیں روک سکتا۔

کلپ میں لڑکا اپنی ناک پر ٹشو پکڑے ہوئے نظر آتا ہے اور جب ماں نے پوچھا کہ کیا غلط ہے، تو لڑکے نے جواب دیا کہ وہ الرجی کا شکار ہے۔

ماں ںے پچھا کہ ’آپ کو کس چیز سے الرجی ہے؟‘ لڑکے نے جواب دیا مجھے کتابوں کی بو سے الرجی ہے۔

ماں نے کہا ’کیا آپ کہہ رہے ہیں کہ آپ اب ہوم ورک نہیں کر سکتے؟ کیا ہم اس کا علاج کرواسکتے ہیں؟”

اس وقت اس نے ٹشو کا ایک ٹکڑا اپنی ناک کے اندر ڈالا اور پھر سے رونے لگا لیکن جب ماں نے پوچھا کہ کیا وہ اسپتال جانا چاہتا ہے تو اس نے جلدی سے انکار کر دیا۔

خاتون نے پوچھا کہ ’آپ کو پچھلے پانچ سالوں سے الرجی کیوں نہیں تھی؟ لیکن اس سال آپ کو اچانک علامات نظر آئیں؟‘

لڑکے نے جواب دیا کہ ’کیونکہ یہ انکیوبیشن کی مدت تھی۔‘

بچے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی اور سوشل میڈیا صارفین بھی اس پر تبصرے کرتے دکھائی دیے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں