The news is by your side.

Advertisement

وٹامن ڈی کی کمی سے ایک اور خطرہ سامنے آگیا

جسم میں وٹامن ڈی کی کمی بہت سے مسائل پیدا کرسکتی ہے اور اس کی مناسب مقدار مختلف مسائل سے بچاتی ہے، حال ہی میں اس حوالے سے ایک نئی تحقیق سامنے آئی ہے۔

بین الاقوامی ویب سائٹ کے مطابق جاپان میں کی جانے والی ایک حالیہ تحقیق سے معلوم ہوا کہ وٹامن ڈی کی کمی کو دور کرنے والی سپلیمنٹس لینے سے ذیابیطس ٹائپ 2 کا خطرہ کم ہوتا ہے۔

تحقیق میں کہا گیا کہ ماہرین کی جانب سے 1256 افراد پر 3 سال تک کی جانے والی تحقیق کے نتائج سے معلوم ہوا کہ جو لوگ وٹامن ڈی کی کمی کو پورا کرنے کے لیے سپلیمنٹس لیتے ہیں ان میں نہ صرف ذیابیطس ٹائپ 2 کے ہونے کا خطرہ کم ہوتا ہے بلکہ ان میں انسولین کی مقدار بھی بہتر رہتی ہے۔

تحقیق کے دوران ماہرین نے رضا کاروں کو دو گروپوں میں تقسیم کیا، جس میں سے ایک گروپ کو ماہرین نے یومیہ وٹامن ڈی کے سپلیمنٹ کی انتہائی کم مقدار فراہم کی، جبکہ دوسرے گروپ کو صرف سادہ گلوکوز دیا گیا۔

ماہرین نے تحقیق کے دوران رضا کاروں کے ہر 3 ماہ کے بعد مختلف ٹیسٹ کیے، جن میں ان کے باڈی ماس انڈیکس کے علاوہ دیگر ٹیسٹ بھی شامل تھے اور ان میں ذیابیطس کو بھی چیک کیا گیا۔

نتائج سے معلوم ہوا کہ جو افراد وٹامن ڈی کی کمی کو پورا کرنے والے سپلیمنٹس لے رہے تھے ان میں ذیابیطس ٹائپ ٹو کے ہونے کے امکانات 11 فیصد کم تھے۔

تحقیق میں شامل ماہرین کے مطابق اگرچہ وٹامن ڈی کی کمی کے شکار افراد اور وٹامن ڈی کے سپلیمنٹ لینے والے افراد کے نتائج میں کوئی بہت بڑا نمایاں فرق نہیں تھا، تاہم یہ دیکھا گیا کہ سپلیمنٹ لینے والے افراد میں ذیابیطس ٹائپ 2 سے متاثر ہونے کے امکانات کم ہوتے ہیں۔

ماہرین نے تجویز دی کہ ذیابیطس ٹائپ 2 سے بچنے کے لیے لوگ وٹامن ڈی کے سپلیمنٹس لے سکتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں