The news is by your side.

Advertisement

روس کا امریکی سفارتی عملے کے775 ارکان کوملک چھوڑنےکا حکم

واشنگٹن : روسی صدر ولادی میر پیوٹن کا کہنا ہے کہ ماسکو پرنئی امریکی پابندیوں کے بعد ملک میں امریکی سفارتی عملے کے 755 ارکان کو لازمی ملک چھوڑنا ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق روسی صدر ولادی میر پیوٹن نے کہا ہے کہ امریکی سفارتی عملے کے775 ارکان کو رواں سال ستمبر تک ملک سے نکلنا ہوگا۔

امریکی سفارتی عملے کے775ارکان کے نکلنے کے بعد ماسکو میں امریکی عملے کے ارکان کی تعداد 455 ہو جائے گی اور اتنی ہی تعداد میں روسی عملہ اس وقت واشنگٹن میں ہے۔

روسی صدر کا کہنا ہے کہ امریکی سفارت خانے اور قونصل خانوں میں ایک ہزار سے زیادہ افراد کام کر رہے تھے اور 775 لوگوں کو روس میں اپنی لازمی اپنی سرگرمیاں ختم کرنا ہوں گی۔


امریکی ایوانِ نمائندگان نے روس پر نئی پابندیاں لگانے کے بل کی منظوری دے دی


یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے امریکی ایوانِ نمائندگان نے روس پر نئی پابندیاں لگانے کے بل کی منظوری دی تھی جبکہ صدرڈونلڈٹرمپ نے بل کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

واضح رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ اورروسی صدر کے درمیان تعلقات امریکی صدراتی انتخاب کے دوران مبینہ روسی مداخلت کےباعث شدید دباؤ میں ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں