بلوچستان کے قیدیوں کی حق رائے دہی استعمال کرنے کی درخواست Balochistan
The news is by your side.

Advertisement

بلوچستان کے قیدیوں کی حق رائے دہی استعمال کرنے کی درخواست

کوئٹہ: بلوچستان کے قیدیوں نے انتخابات میں اپنے حق رائے دہی استعمال کرنے کے لیے درخواست جمع کروادی ہے۔

تفصیلات کے مطابق بلوچستان کی مختلف جیلوں کے قید 154 قیدیوں نے انتخابات میں اپنا حق رائے دہی استعمال کرنے کے لیے درخواست دے دی ہے، قیدیوں کی درخواست ریٹرننگ افسران کو بھجوا دی گئی ہے۔

بلوچستان کی 11 جیلوں میں 1950 قیدی موجود ہیں تاہم صرف 154 قیدیوں نے انتخابات میں ووٹ کاسٹ کرنے کے لیے درخواست دی ہے۔

سب سے زیادہ 60 درخواستیں سینٹرل جیل سے بھیجی گئی ہیں، 43 درخواستیں کوئٹہ جیل سے موصول ہوئی ہیں جبکہ 21 درخواستیں ژوب جیل سے بھیجی گئی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق 13 درخواستیں خضدار جیل، 7 نوشکی، 6 لورالائی، 2 مستونگ، 2 تربت جیل سے بھیجی گئی ہیں، ڈیرہ مراد جمالی اور گڈانی جیل سے کوئی درخواست موصول نہیں ہوئی ہے۔

واضح رہے کہ انتخابات 2013 میں بھی الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے قیدیوں کو حق رائے دہی استعمال کرنے کا حق دیا گیا تھا۔

مزید پرھیں: اڈیالہ جیل کے قیدیوں کی حق رائے دہی استعمال کرنے کی درخواست

خیال رہے کہ کچھ روز قبل اڈیالہ جیل کے 400 قیدیوں نے پوسٹل بیلٹ کے لیے درخواست دی تھی، جیل ذرائع کا کہنا تھا کہ درخواست دینے والوں میں مرد اور خواتین قیدی شامل ہیں جن میں سے کچھ مجرم ثابت ہوچکے ہیں جبکہ کچھ کے مقدمات ابھی زیر تفتیش ہیں۔

ان کے مطابق جیل میں اس وقت 150 خواتین قیدی موجود ہیں جن میں سے بیشتر کے پاس قومی شناختی کارڈ موجود نہیں جو ووٹ دینے کے لیے بے حد ضروری ہے۔

یاد رہے کہ ملک بھر میں عام انتخابات 25 جولائی کو منعقد کیے جائیں گے جس کے لیے تیاریاں زور و شور سے جاری ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک’پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں