The news is by your side.

Advertisement

حسین حقانی اور ہماری سوچ میں فرق آچکا، زرداری

لاہور: پاکستان کے سابق صدر اور پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ اسامہ جیسا معاملے ہمارے سامنے آیا تو پارلیمنٹ نے اس کا مقابلہ کیا، حسین حقانی اور ہماری سوچ میں بڑا فرق آچکا، پاناما کیس کے فیصلے کا انتظار ہے، میں اور بلاول اسی سال پارلیمنٹ میں آئیں گے۔

لاہور میں بات کرتے ہوئے سابق صدر نے کہا کہ پوری دنیا کی نظریں پاکستان پر ہیں ، ہمارے چار مطالبات میں سے 3 تسلیم کرلیے گئے اور ایک ابھی تک باقی ہے۔

انہوں نے کہا کہ فوجی عدالتوں کی مدت میں پہلے بھی 2 سال کی توسیع کی گئی تھی، فوج ہمارے کارکنوں کے قاتلوں سے لڑ رہی ہے ہمیں اُن پر فخر ہے،  بلاول اور میرا اسی پارلیمنٹ میں آنے کا ارادہ ہے۔

 آصف زرداری نے کہا کہ پاناما کیس کے فیصلے کا مجھے بھی انتظار ہے، عدالتی فیصلے کے بعد پیپلزپارٹی ایک پہلے سے زیادہ متحرک ہوجائے گی، حکومت نے ہمارے 4 میں سے 3 مطالبات تسلیم کرلیے۔

سابق صدر نے مزید کہا کہ ’’اسامہ جیسا معاملے ہمارے سامنے آیا تاہم پارلیمنٹ کی مدد سے اس کا مقابلہ کیا، میں نہیں سمجھتا کہ حسین حقانی نے یہ کہا کہ اُس کو ویزا دینے کا اختیار نہیں تھا، حقانی اور ہماری سوچ میں بہت فرق آچکا ہے یہی وجہ ہے کہ میری اُس سے ملاقات نہیں ہوتی۔

یاد رہے حسین حقانی نے گزشتہ دنوں امریکی اخبار میں ایک آرٹیکل تحریر کیا جس میں ایبٹ آباد میں امریکی فوجیوں کی کارروائی کے حوالے سے تحریر کیا گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں