واٹر بورڈ کا پانی کی چوری روکنے کے لیے اینٹی اینکروچمنٹ سیل کا مطالبہ -
The news is by your side.

Advertisement

واٹر بورڈ کا پانی کی چوری روکنے کے لیے اینٹی اینکروچمنٹ سیل کا مطالبہ

کراچی: ملک کے سب سے بڑے شہر میں قبضہ مافیا سے جان چھڑانے کے لیے واٹر بورڈ نے بھی کمر کس لی ہے اور پہلی بار واٹر بورڈ نے اپنی زمینوں پر قبضہ چھڑانے، مستقبل میں چائنا کٹنگ سے بچنے اور پانی کی چوری روکنے کے لیے پولیس اسٹیشن اور اینٹی اینکروچمنٹ سیل کا مطالبہ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق واٹر بورڈ نے پانی کی چوری روکنے کے لیے پولیس اسٹیشن اور اینٹی اینکروچمنٹ سیل کا مطالبہ کردیا جبکہ لوکل گورنمنٹ نے اس منصوبے کی منظوری دے دی ہے اور اب یہ سمری حتمی منظوری کے لیے وزیر اعلیٰ کے پاس بھیج دی گئی ہے اور سمری منظور ہوتے ہی شہر قائد میں واٹر بورڈ کو اپنا پولیس اسٹیشن اور اینٹی اینکروچمنٹ سیل مل جائے گا۔

ذرائع کے مطابق اس وقت شہر قائد میں واٹر بورڈ کی کروڑوں روپے کی زمین قبضہ مافیا کے پاس ہےل، واٹر بورڈ نے اپنی زمینوں پر سے نہ صرف قبضہ چھڑانے بلکہ مستبقل میں چائنا کٹنگ سے بچنے اور شہر قائد میں پانی کی چوری روکنے کے لیے حکمت عملی مکمل کرلی ہے۔

ذرائع کے مطابق پولیس واٹر بورڈ کی حساس تنصیبات کی حفاظت کے ساتھ ساتھ شہر میں پانی سپلائی کرنے والے جگہوں کی بھی حفاظت کرے گی۔ ماضی میں شہر میں پانی کی سپلائی متاثر کرکے کئی بار امن وامان کی صورت حال کو خراب کیا گیا ہے۔

لیٹر کے مطابق کے الیکٹرک، کے ایم سی، ریلوے کی طرح واٹر بورڈ کو بھی پولیس فورس دی جائے تو ادارہ اپنی کارکردگی میں مزید بہتری لا سکتا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں