واٹر ٹینکرز مالکان نے مطالبات کی منظوری کے لیے شاہراہ فیصل جام کردی -
The news is by your side.

Advertisement

واٹر ٹینکرز مالکان نے مطالبات کی منظوری کے لیے شاہراہ فیصل جام کردی

کراچی: واٹر ٹینکرز مالکان نے اپنے مطالبات کی منظوری کے لئے احتجاجاً شاہراہ فیصل پر عوامی مرکز کے قریب واقع ایم ڈی واٹر بورڈ کے دفتر کے باہر ٹینکرز کھڑے کرکے پوری شاہراہ بلاک کردی۔

تفصیلات کے مطابق واٹر ٹینکرز ایسوسی ایشن نے مطالبات کی منظوری کے لیے شاہراہ فیصل پر واقع ایم ڈی “کراچی واٹراینڈ سیوریج بورڈ” کے دفتر کے باہر شہر بھر کے ٹینکڑز کھڑے دیے،جس کے باعث گاڑیوں کی قطاریں لگ گئیں اور بدترین ٹریفک جام ہو گیا۔


مزید پڑھیے :   شارع فیصل پر بد ترین ٹریفک جام


اس موقع پر واٹر ٹینکرز کے مالکان کا کہنا تھا کہ کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ ہائیڈرینٹس کو ٹھکیداری نظام سے پاک کیا جائے اور ہائیڈرینٹس کو حکومت اپنے زیر انتظام چلائے۔

احتجاج کی سربراہی کرنے والے واٹر ٹینکرز ایسوسی ایشن کے صدر شریف احمد نے بتایا کہ ایک مہینہ قبل بھی مطالبات کی منظوری کے لئے احتجاج کیا گیا تھا لیکن حکومت نے کان نہ دھرے، احتجاج میں پورے شہر کے ٹینکرز مالکان ٹینکروں کے ہمراہ شریک ہیں اور مطالبات کی منظوری تک ٹینکرز نہیں ہٹائیں گے۔

پولیس کے مطابق احتجاج کے لیے پیشگی اجازت نہیں لی گئی تھی،اس لیے متبادل نظام نہیں کرسکے،تاہم پولیس کے بار بار کہنے پر ٹینکرز نہ ہٹانے پر پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج شروع کردیا،اور واٹر ٹینکرز ایسوسی ایشن کے رہنماؤں سمیت متعدد ٹینکر ڈرائیور کو گرفتار کر لیا گیا۔

دوسری جانب ایم ڈی واٹر بورڈ مصباح فرید نے اپنا موقف پیش کرتے ہوئے کہا کہ ٹینکڑز مالکان نے زیر زمین پانی اور ہائیڈرینٹ کھولنے کا مطالبہ کیا ہے ، ان کا کہنا تھا کہ عوامی مفاد میں ںئے ہائیڈرینٹ کھولنے کی اجازت نہیں دے سکتے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں