The news is by your side.

Advertisement

غصے پر قابو پانے کے لیے 5 تجاویز

غصہ ایک نہایت طاقتور جذبہ ہے جو انسانی صحت کو بری طرح متاثر کرتا ہے۔ غصے کے دوران جذباتی اور نامعقول فیصلے کرنا عام بات ہے اور یہ بہت مشکل ہے کہ غصے میں ہوش و حواس پر قابو رکھا جائے۔

ماہرین کے مطابق شدید غصہ دل کے اچانک دورے، دماغ کی شریان پھٹنے یا فالج کے حملے کا سبب بھی بن سکتا ہے۔ علاوہ ازیں مستقل غصہ کرنا ڈپریشن اور ذہنی تناؤ کا باعث بنتا ہے جو آگے چل کر صحت کو مزید نقصانات پہنچاتا ہے۔

مزید پڑھیں: جذبات ہماری صحت پر کیسے اثر انداز ہوتے ہیں؟

یہاں ہم آپ کو ایسی 5 تجاویز بتارہے ہیں جن پر عمل کر کے آپ اپنے غصے پر قابو پا سکتے ہیں جو آپ کی صحت اور جذبات کے لیے مفید ہوگا۔


مزاح

غصے کے دوران کسی مزاحیہ صورتحال یا گفتگو کو یاد کرنا یا مزاح پر مبنی کوئی شے دیکھنا غصے کو کم کرسکتا ہے۔

یہ ایک بہت آسان طریقہ ہے جو باآسانی آپ کے غصے کو کم کرنے میں مدد دے گا۔


جگہ تبدیل کریں

جب 2 افراد غصے میں ایک دوسرے سے بحث و تکرار کریں تو ایک شخص کا وہاں سے ہٹ جانا بہتر ہوتا ہے۔

یہ عمل صورتحال کی کشیدگی اور غصے کو کم کرنے میں معاون ثابت ہوتا ہے جس کے بعد غصے کا شکار افراد ٹھنڈے دماغ سے صورتحال کا تجزیہ کر سکتے ہیں۔


مفروضے قائم کرنے سے گریز کریں

بعض دفعہ ایسی صورتحال بھی پیش آتی ہے جب ہم اپنی طرف سے مفروضے قائم کرلیتے ہیں اور انہیں سچ سمجھ کر سخت ردعمل کا مظاہر کرتے ہیں جبکہ حقیقت میں ایسا کچھ بھی نہیں ہوتا۔

یہ ضروری ہے کہ لوگ آپس میں گفت و شنید کے ذریعے مسائل کو حل کریں تاکہ غصے اور بد گمانیوں سے بچا جاسکے۔

اپنی طرف سے مفروضے قائم کرنا اور انہیں درست سمجھنا نقصان کا باعث بن سکتا ہے۔


مراقبہ

باقاعدگی سے مراقبہ کرنا ذہن کو پرسکون کرتا ہے اور دماغ سے غصے سمیت منفی جذبات کا خاتمہ ہوتا ہے۔

اگر آپ کو بہت زیادہ غصہ آتا ہے تو مراقبے کو اپنا معمول بنا لیں یقیناً آپ اپنے غصے میں کمی محسوس کریں گے۔


پرسکون مقام

بعض اوقات پرہجوم اور پرشور مقامات بھی ہمارے دماغ کو تناؤ کا شکار کردیتے ہیں جس کے بعد ہمیں معمولی سی بات پر بھی غصہ آسکتا ہے۔

دماغ کو پرسکون بنانے کے لیے ضروری ہے کہ روز کسی خاموش اور آرام دہ مقام پر وقت گزارا جائے۔ یہ مقام گھر سے دور ساحل سمندر بھی ہوسکتا ہے، اور گھر کے اندر کوئی خاموش کمرہ بھی۔

خاموشی آپ کے دماغی خلیات کو آرام پہنچا کر آپ کے اعصاب کو پرسکون کرتی ہے۔

غصے کے بارے میں مزید مضامین پڑھیں


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں