The news is by your side.

Advertisement

سردیوں میں خشک ہونٹوں سے بچاؤ کا طریقہ

موسمِ سرما جہاں جلد کو خشک کرتا ہے وہیں سردیوں میں چلنے والی خشک ہوائیں ہونٹوں کوخشک اورکھردرا کر دیتی ہیں۔

ہونٹوں کی خشکی اگرزیادہ ہوجائے تو وہ پھٹنے لگتے ہیں اوران میں خون بھی آنے لگتا ہے عموماً لوگ اس تکلیف سے بچنے کے لیے کریم یا لپ بام استعمال کرتے ہیں تاہم خشک ہوا کے باعث کچھ دیربعد ہونٹ پھر سے خشک لگنے لگتے ہیں۔

غرض یہ کہ پورا موسم ہی اس مشکل سے جونجنے میں نکل جاتا ہے ۔ہونٹوں کو نرم و ملائم رکھنے کے لیے ان کی مستقل دیکھ بھال کرنا ضروری ہے ۔ سردیوں میں کیونکہ ہوا میں نمی کم ہو تی ہے جس کی وجہ سے ہونٹوں کی نمی بھی بھاپ بن کر اڑ جاتی ہے ۔ اس موسم میں ہونٹوں کو پھٹنے سے بچانے کے لیے مندرجہ ذیل احتیاطیں کرناضروری ہیں:

ہونٹوں کو قدرتی نمی فراہم کرنے کے لیے زیادہ سے زیادہ پانی پئیں ۔

صحت بخش غذا کھائیں ۔ خاص طور سے سبزیاں اور پھل جن میں اینٹی آکسیڈنٹ کی خصوصیات موجود ہوں ۔

جلد کو نرم و ملائم رکھنے کے لیے وٹامن اے اور سی کی ضرورت ہوتی ہے۔ دودھ، گاجر اور خوبانی میں وٹامن اے اور رسیلے پھل جیسے کہ لیمبو، موسمبی اور نارنجی میں وٹامن سی کثیر تعداد میں موجود ہوتا ہے ۔

ہونٹو ں پر زبان پھیرنے سے گریز کریں ۔ ایسا کرنے سے ہونٹ مزید خشک ہو جاتے ہیں ۔ ہونٹوں پر زبان پھیرنے سے ان کی قدرتی نمی جاتی رہتی ہے ۔

ہونٹوں کو بھی ایکسفولئیٹ کرنے کی ضرورت ہوتی ہے۔ کسی لائٹ سے اسکرب سے ہونٹوں کا انگلی کی مدد سے مساج کریں دھونے کے بعد لپ بام ضرور لگائیں ۔

اپنے ہونٹوں کو تیز دھوپ سے محفوظ رکھیں۔ ویسے تو سردیوں کی دھوپ لینا اچھا لگتا ہے لیکن تیز شعاؤں سے ہونٹوں کی حفاظت کرنا ضروری ہے ۔اس کے لیے ہونٹوں پر سن اسکرین لگایا جاسکتا ہے۔

بعض اوقات کچھ ٹوتھ پیسٹ ہونٹوں کو خشک کردیتے ہیں۔ اگر خشکی سے نجات حاصل نہیں ہورہی ہو تو ٹوتھ پیسٹ تبدیل کر کے دیکھیں ۔

اکثر دانتوں پر بریسز لگانے والوں کو خشک ہونٹوں کی شکایت رہتی ہے۔ ایسی صورت میں اپنے ڈینٹسٹ سے مشورہ کریں ۔

زیادہ تیز کیمیکل والی لپ اسٹکس سے اجتناب کریں ۔ قدرتی اجزا سے بنی لپ اسٹک خریدیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں