The news is by your side.

Advertisement

اسمارٹ فونز کو سائبر حملوں سے محفوظ رکھنے کے طریقے

واشنگٹن: سائبر حملوں سے اپنے موبائل آلات کو محفوظ رکھنا جتنا اہم آج ہے اتنا پہلے کبھی نہیں تھا، اسمارٹ فونز کے ذریعے دو ارب سے زائد افراد انٹرنیٹ تک رسائی حاصل کرتے ہیں اس لیے ہیکروں اور انٹرنیٹ چوروں کے لیے دھوکا بازی میں ماضی کے مقابلے میں اضافہ ہوگیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکا کے تحقیقاتی ادارے نے مارچ میں کہا تھا کہ دھوکے باز آپ کا پیسہ چرانے، آپ کی نجی معلومات چرانے، یا دونوں چرانے کے لیے کووڈ-19 کی عالمی وبا کو ناجائز فائدہ اٹھانے کے لیے استعمال کر رہے ہیں، انہیں ایسا ہرگز نہ کرنے دیں۔

امریکاکی سائبر کی قومی تزویراتی پالیسی میں بیان کیا گیا ہے کہ اِن کے حربوں میں کووڈ-19 کی جعلی دواؤں سے لے کر ایسی جعلی ای میلیں تک شامل ہوتی ہیں جو بظآہر صحت کی تنظیموں کی طرف سے بھیجی گئی معلوم ہوتی ہیں۔ اِن ای میلوں کے ذریعے آپ کے سمارٹ فونز میں خطرناک قسم کے سافٹ ویئر ڈال دیئے جاتے ہیں۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ امریکا سائبر اسپیس کو عالمی سطح پر محفوظ بنانے کے لیے دوسرے ممالک کے ساتھ شراکت کرنے کے لیے تیار کھڑا ہے۔

سائبر سکیورٹی کے ایک عالمی لیڈر کی حیثیت سے، اُن نیٹ ورکوں کو تحفظ فراہم کرنے کے لیے جو ہم سب استعمال کرتے ہیں، امریکہ دوسرے ممالک اور نجی شعبے کے ساتھ شراکت داری کرتا ہے۔ تاہم یہ ضروری ہے کہ اسمارٹ فونوں کو استعمال کرنے والے بھی اپنے آپ کو تحفظ فراہم کرنے کے لیے ضروری اقدامات اٹھائیں۔

سائبر سکیورٹی کے قومی اتحاد کے نام سے واشنگٹن میں قائم ایک غیر منفعتی تنظیم اسمارٹ فون کے استعمال کرنے والوں کے لیے مندرجہ ذیل اقدامات اٹھانے کی تجویز کرتی ہے تاکہ وہ اپنے آپ کو محفوظ بنا سکیں۔

پاس ورڈ یا فنگر پرنٹ اسکین سے اپنے اسمارٹ فون کو لاک کریں۔
ذاتی معلومات کو کسی ہوٹل یا کیفے کے مفت وائی فائی جیسے غیرمحفوظ نیٹ ورکوں کے ذریعے نہ بھیجیں۔
بلیوٹوتھ آٹو کنیکٹ کو غیر فعال کریں اور صرف اپنی مرضی سے نیٹ ورکوں سے کنیکٹ کریں۔
ایپس صرف سرکاری ایپ سٹوروں جیسے قابل اعتماد ذرائع سے ڈاؤن لوڈ کریں۔

 سمارٹ فونوں کو محفوظ رکھنے کے پانچ طریقوں سے متعلق تصویری خاکہ (State Dept./S. Gemeny Wilkinson)

Comments

یہ بھی پڑھیں