The news is by your side.

Advertisement

ہم پانچ سال کے لیے آئے ہیں، 5سال بعد احتساب ہونا چاہیے ، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ بار بار حکومت جانے کی پیش گوئیاں ہوتی رہیں، ہمیں عوام نے5 سال کے لیے مینڈیٹ دیا ہے اور ہم پانچ سال کے لیے آئے ہیں، 5سال بعد احتساب ہونا چاہیے کہ ہم نے ملک اور عوام کے لیے کیا کیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کی تقریب کے موقع پر وزیراعظم عمران خان نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا 50 لاکھ گھروں کے منصوبے سے لوگوں کو گھر ملنا شروع ہو گئے ہیں، دو نئے شہر بنا رہے ہیں، 50 لاکھ گھروں کاہدف پورا کرلیں گے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ 18ویں ترمیم کے بعد اختیارات صوبوں کےپاس ہیں، چاہتے ہیں سندھ حکومت بھی تعمیراتی شعبے میں مراعات سے فائدہ اٹھائے۔

وزیراعظم نے کہا کہ پنجاب میں قبضہ مافیا کےخلاف گرینڈآپریشن جاری ہے ، اگلے ماہ فوڈ سیکیورٹی کا پورا پروگرام لارہے ہیں، ،اپریل میں لانچ کروں گا۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت میں آئے توپہلےدن ہی کہا گیافیل ہوگئے ہیں، کہا جاتا تھا اس ہفتے گھر چلی جائے گی ، بار بار حکومت جانے کی پیش گوئیاں ہوتی رہیں، ہمیں عوام نے5 سال کے لیے مینڈیٹ دیا ہے، ہم پانچ سال کے لیے آئے ہیں، 5سال بعد احتساب ہونا چاہیے کہ ہم نے ملک اور عوام کے لیے کیا کیا۔

ہاؤسنگ منصوبے کے حوالے سے وزیراعظم نے کہا کہ انتہائی غریب افرادکو7ہزارسےزائدگھربناکردےدیےہیں ایک لاکھ گھر پر تین لاکھ سبسڈی حکومت دے رہی ہے، عام آدمی کیلئے آسان ہوجاتا ہے کرایہ کی طرح قسط اداکرکے گھر اپنا کرتا ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت کی طرف سے ہمیں ریسپانس نہیں ملتا تاہم پنجاب اور بلوچستان میں تیزی سے کام ہورہاہے، بنڈل آئی لینڈ کیلئے کوشش کررہےہیں مگرسندھ حکومت اجازت نہیں دےرہی، راوی پراجیکٹ ،نیاپاکستان ،سینٹرل ڈسٹرکٹ میں ہی 50لاکھ سے زائد گھربن جائیں گے۔

قبضہ مافیا سے متعلق انھوں نے کہا کہ قبضہ گروپ کیخلاف بہت بڑا جہاد شروع کررکھاہے، لاہور کا بڑاقبضہ گروپ پچھلی حکومت کیساتھ ملا ہواتھا۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ بھارت اور چین کو دیکھیں تو وہ کہاں سے کہاں پہنچ گئے،کنسٹرکشن کیلئےمراعات کے ثمرات اسی سال نظرآجائیں گے، جب تک شہروں کے ماسٹر پلان نہیں ہوگا تو کیسے علاقوں کو بچائیں گے، سندھ میں تعمیری شعبےکوہرطرح کی مراعات دینے کوتیار ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں