The news is by your side.

Advertisement

2 افراد کے قتل کے بعد بھی انتظامیہ سوتی رہی، لاہور ایئرپورٹ پر پھر اسلحہ برآمد

لاہور: صوبائی دارالحکومت لاہور کے علامہ اقبال انٹرنیشل ایئرپورٹ پر گاڑی سے اسلحہ برآمد ہوا ہے، گاڑی کے ڈرائیور کو پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ایئرپورٹ سیکیورٹی فورس (اے ایس ایف) ذرائع کا کہنا ہے کہ لاہور ایئرپورٹ پر گاڑی سے اسلحہ برآمد ہوا ہے جس کے بعد وین ڈرائیور کو حراست میں لے لیا گیا۔

اے ایس ایف ذرائع کے مطابق گاڑی کی تلاشی پر 30 بور پستول اور 5 راؤنڈ برآمد ہوئے۔ وین ڈرائیور کو پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔

خیال رہے کہ 3 ماہ قبل لاہور ایئرپورٹ کے اندر فائرنگ کا واقعہ بھی پیش آیا تھا جس میں 2 افراد قتل ہوگئے تھے، واقعے نے سیکیورٹی حکام میں کھلبلی مچادی تھی۔

بعد ازاں ابتدائی انکوائری رپورٹ میں ایئر پورٹ کے واحد اسکینر کے 2 سال سے خراب ہونے کا انکشاف ہوا تھا۔

ذرائع کے مطابق ایئر پورٹ پر واحد اسکینر صرف ڈیپارچر لاؤنج تک جانے والی گاڑیوں کو اسکین کرتا ہے، پارکنگ ایریا میں جانے والی گاڑیوں کو چیک کرنے کے لیے کوئی اسکینر نہیں۔

اے ایس ایف ذرائع کے مطابق اسکینر خراب ہونے کے باعث گاڑیوں کی اسکیننگ نہیں ہو رہی تھی، سول ایوی ایشن اتھارٹی (سی اے اے) کو ہر ماہ اسکینر کی خرابی سے متعلق آگاہ کیا جاتا رہا، آگاہ کرنے کے باوجود اسکینر کو ٹھیک نہ کروایا گیا۔

فائرنگ کے واقعے کے بعد جب ملک بھر کے ایئرپورٹس کی سیکیورٹی کا دوبارہ جائزہ لیا گیا تو کراچی ایئرپورٹ کا اسکینر بھی سال بھر سے خراب ہونے کا انکشاف ہوا۔

کراچی ایئرپورٹ پر اسکینر کی مدد سے گاڑیوں کی جامع تلاشی لی جاتی تھی تاہم اسکینر خراب ہونے کے باعث گاڑیوں کی اسکیننگ کا عمل رک گیا، اے ایس ایف نے مینوئل طریقے سے گاڑیوں کو سرچ کرنے کا سلسلہ شروع کر رکھا تھا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں