The news is by your side.

Advertisement

کیا جلسوں سے کورونا نہیں پھیل رہا؟ شادی ہال مالکان نے احتجاج کی دھمکی دے دی

کراچی / لاہور : شادی ہال مالکان نے ہالوں کی بندش کیخلاف عدالت جانے کا اعلان کردیا ان کا کہنا ہے کہ کیا جلسوں سے کورونا نہیں پھیل رہا صرف میرج ہالز سے پھیل رہا ہے؟

تفصیلات کے مطابق کراچی اور لاہور کے شادی ہال مالکان نے حکومتی فیصلے کیخلاف علم بغاوت بلند کردیا، ان کا کہنا ہے کہ جیل جانے کو تیار ہیں پر شادی ہال بند نہیں کرینگے۔

اس حوالے سے کراچی بینکویٹ ہال ایسوسی ایشن نے بیس نومبر سے شادی ہالز کی بندش کیخلاف احتجاج کی دھمکی دے دی ایسوسی ایشن کے صدر شارق میمن نے 20نومبر سے حکومت کی جانب سے شادی ہالز کی بندش کی پرزور مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ حکومت اپنے فیصلے پر نظر ثانی کرے تاہم بصورت دیگر ہم احتجاج کریں گے۔

کراچی کے مقامی بینکویٹ میں پریس کانفر نس سے خطاب کرتے ہوئے ان کہنا تھا کہ ہماری انڈسٹری سے وابستہ افراد7ماہ کے طویل عرصے کے لاک ڈاؤن کے بعد ایک بار پھر ہمارے کاروبار کو بند کیا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم حکومت سے اپیل کرتے ہیں کہ خدارا اپنے فیصلے پر نظر ثانی کرتے ہوئے یہ فیصلہ فی الفور واپس لیا جائے۔ انہوں نے بتایا کہ شادی ہالز کے مرکزی دروازوں پر ماسک اور سینی ٹائزر سمیت تمام ایس او پیز پر بھی عمل کرتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ انتظامیہ کی طرف سے مختلف شادی ہالوں کو سیل کرنے کا عمل انتہائی افسوسناک ہے اور کورونا ایس او پیز پر عمل کے باوجود ہمیں ہراساں کیا جاتا ہے۔

۔انہوں نے متنبہ کیا کہ ہر شادی ہال سے کم و بیش 40 سے 50افراد کا روزگار وابستہ ہے اگر حکومت نے اپنا یہ فیصلہ واپس نہ لیا تو فاقہ کشی کی نوبت آن پہنچے گی۔

دوسری جانب لاہور میں بھی شادی ہال مالکان حکومتی فیصلے کیخلاف بول پڑے، ان کا کہنا ہے کہ ہم میرج ہالز بند کرنے کے فیصلے کو نہیں مانتے۔

میرج ہال ایسوسی ایشن کے عہدیادار خالد ادریس اور ملک اشفاق کا کہنا ہے کہ کیا سیاسی جلسوں سے کورونا وائرس نہیں پھیل رہا؟ یا صرف میرج ہالز سے ہی یہ وبا پھیل رہی ہے؟

انہوں نے کہا کہ ہم واضح کردیا چاہتے ہیں کہ شادی ہال کھلنے سے کورونا نپہیں پھیلے گا اگر فیصلہ واپس نہ لیا گیا تو انصاف کے حصول کیلئے ہم عدالت جائیں گے اور اس فیصلے کو چیلنج کریں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں