The news is by your side.

Advertisement

یہودی علاقے سے گزرنے پر 2 فلسطینی شہید

غزہ: صیہونی فورسز کی بربریت، فائرنگ کے دو مخلتف واقعات میں 3 نہتے فلسطینی شہید کردئیے۔

دنیا کی توجہ روس یوکرین جنگ پر مرکوز ہیں، جہاں عالمی میڈیا لمحہ بہ لمحہ جنگ سے متعلق خبریں فراہم کررہا ہے، مگر فلسطین میں اسرائیلی بربریت پر کی خبریں شاد ونادر ہی شائع ہورہی ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق اسرائیلی فوج نے مغربی کنارے میں وحشیانہ کارروائی کرتے ہوئے دو مختلف مقامات پر فائرنگ سے 3 نہتے فلسطینیوں کو شہید کردیا ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق فائرنگ کے ایک واقعے میں اسرائیلی فوج نے یہودی آبادکاروں کے علاقے سے گزرنے پر نہتے فلسطینیوں پرفائرنگ کی جس میں دو نوجوان شہید ہوئے، شہید فلسطینیوں کی عمر یں اٹھارہ اور بائیس برس کے درمیان ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: اسرائیلی فورسز نے فائرنگ کر کے فلسطینی نوجوان کو شہید کر دیا

دوسرے واقعے میں قابض فوج نے ایک نوجوان کو چھاپے کے دوران فائرنگ کرکے شہید کیا۔

فلسطینی وزارت صحت کے مطابق شہید ہونے والوں کی شناخت بائیس سالہ عبداللہ الحوساری اور اٹھارہ سالہ شادی خالد نجم کے ناموں سے کی گئی ہے، دو فلسطینیوں کی شہادت پر جنین میں شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے۔

یاد رہے کہ اسرائیل نے 1967 میں اردن کے خلاف چھ روزہ جنگ کے دوران مغربی کنارے پر قبضہ کر لیا تھا، اس کے بعد سے اس پورے علاقے میں اسرائیل نے آبادکاری کا سلسلہ جاری ہے جو کہ بین الاقوامی قوانین کے تحت غیر قانونی تصور کیا جاتا ہے۔ ان اسرائیلی بستیوں میں تقریبا چار لاکھ پچہتر ہزار اسرائیلی آباد ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں