The news is by your side.

Advertisement

مائیکل ہولڈنگ نسلی تعصب پر گفتگو کرتے ہوئے آبدیدہ ہوگئے

ساوتھمپٹن: ویسٹ انڈیز کے لیجنڈری کھلاڑی مائیکل ہولڈنگ نسلی تعصب پر گفتگو کرتے ہوئے آبدیدہ ہوگئے۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق انگلینڈ اور ویسٹ انڈیز کے میچ کے دوران سابق ویسٹ انڈین فاسٹ بولر مائیکل ہولڈنگ والدین کے نسل پرستی کے واقعے پر گفتگو کرتے ہوئے آبدیدہ ہوگئے۔

مائیکل ہولڈنگ نے کہا کہ نسلی تعصب کی وجہ سے بہت دکھ سہے ہیں، والدہ کی فیملی نے ان سے ملنا چھوڑ دیا تھا کیونکہ ان کے والد کی رنگت سیاہ تھی، معلوم ہے اس وقت پر والدین پر کیا گزری تھی۔

انہوں نے کہا کہ نسلی تعصب ختم کرنے کا عمل چاہے کتنا ہی سست کیوں نہ ہو اسے جاری رہنا چاہئے۔

مائیکل ہولڈنگ کا کہنا تھا کہ ماضی میں بھی سیاہ فام شہریوں کا نشانہ بنایا گیا اور اب یہ دور واپس آرہا ہے۔

لیجنڈری کھلاڑی کا کہنا تھا کہ سیاہ اور سفید فام دونوں شہریوں کو مزید تعلیم دینے کی ضرورت ہے تاکہ اُن کے درمیان پائی جانے والی غلط فہمی ختم ہوسکے اور وہ ایک دوسرے کو برداشت کرسکیں۔

واضح رہے کہ انگلینڈ اور ویسٹ انڈیز کے درمیان میچ سے قبل دونوں ٹیموں کے کھلاڑیوں اور امپائرز نے گھٹنے کے بل بیٹھ کر امریکی پولیس کی فائرنگ سے ہلاک ہونے والے سیاہ فام شہری جارج فلائیڈ کو خراج عقیدت پیش کیا تھا۔

خیال رہے کہ امریکا میں پولیس اہلکاروں کے ہاتھوں سیاہ فام شہری جارج فلائیڈ کی ہلاکت کے بعد ایک بار پھر دنیا بھر میں نسل پرستی کیخلاف آوازیں بلند ہونا شروع ہوگئی ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں