The news is by your side.

گوادر کے ساحل پر 34 فٹ لمبی وھیل مردہ حالت میں پائی گئی

کوئٹہ: بلوچستان کے مغربی ساحل گوادر پر 34 فٹ لمبی برائڈس وھیل مردہ حالت میں پائی گئی ہے، مچھلی کے جسم پر متعدد زخم بھی پائے گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق گوادر کے مغربی ساحل پر وھیل میمل مردہ حالت میں پائی گئی ہے، مچھلی کے جسم پر کئی زخم بھی موجود تھے۔

گوادر ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے شعبہ ماحولیات کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر عبدالرحیم بلوچ نے اس حوالے سے بتایا کہ برائیڈس نسل کی 34 فٹ لمبی مردہ وھیل مچھلی گوادر کے سمندر میں پائی گئی۔

انھوں نے کہا کہ وھیل کا جسم کئی جگہ سے زخمی تھا، برائیڈس نسل کی وھیل گوادر کے سمندر میں پائی جاتی ہے، کسی وجہ سے زخمی ہوگئی جس سے موت واقع ہوئی۔

عبد الرحیم بلوچ کا کہنا تھا کہ وہ زخموں کی وجہ معلوم کرنے کے لیے تحقیقات کر رہے ہیں، تاہم ابتدائی تجزیے سے معلوم ہوتا ہے کہ مچھلی کسی جہاز سے ٹکرا کر زخمی ہوئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  کیا پلاسٹک دیوہیکل وھیل کی جان لے سکتا ہے؟

انھوں نے مزید بتایا کہ وھیل مچھلی کی ہڈیاں ایک میوزیم میں رکھی جائیں گی تاکہ اس سلسلے میں لوگوں میں آگاہی پیدا کی جا سکے، جب کہ باقی مچھلی کو گوادر ساحل ہی پر دفنایا جائے گا۔

برائڈس وھیل ان تین قسم کے بَلین وھیلز میں سے ایک ہے جو پاکستانی پانیوں میں پائی جاتی ہے، دیگر دو میں ایک بلیو وھیل اور دوسری عربین ہمپ بیک ہے۔ 2013 میں بھی برائڈس وھیل ڈمب، سونمیانی میں مردہ حالت میں ملی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں