The news is by your side.

Advertisement

غیرملکیوں کا خروج وعودہ نہیں لگے گا کیوں کہ ۔۔۔۔۔۔۔۔! سعودی عرب کا دوٹوک جواب

ریاض: سعودی حکومت نے واضح کیا ہے کہ ایسے غیرملکی جن کے پاسپورٹ کی کم از کم مدت 60 دن نہیں ہوگی ان کا خروج وعودہ بھی نہیں لگے گا۔

عرب میڈیا کی روپورٹ کے مطابق سعودی محکمہ پاسپورٹ وامیگریشن(جوازات) سے ایک تارک وطن نے سوال کیا تھا کہ خروج وعودہ پر جانے کے لیے پاسپورٹ کی معیاد کتنی ہونی چاہیے؟۔

جوازات نے دوٹوک جواب دیا کہ خروج نہائی ویزے کے لیے پاسپورٹ کی کم ازکم مدت 60 دن ہونا لازمی ہے اگر مدت اس سے کم ہے تو خروج نہائی جاری نہیں کیا جاسکتا۔

خیال رہے کہ سعودی قوانین کے تحت خروج عودہ(ایگزٹ ری انٹری ویزا) نکلوانے کے بعد 60 دن کے اندر اندر سفر کرنا ہوتا ہے بصورت دیگر ایک ہزار ریال جرمانہ عائد کیا جائے گا۔

قوائدوضوابط کے تحت ساٹھ دن کی مہلت اس لیے دی جاتی ہے تاکہ مملکت میں رہ جانے والے امور نمٹائے جاسکے اگر پاسپورٹ کی معیاد ہی کم ہوگی تو قانوناً فیصلے پر عمل درآمد نہیں ہوسکے گا۔

سعودی عرب: اہل خانہ کو ‘خروج وعودہ’ پر بھیجنے والا غیرملکی بڑی مشکل میں پھنس گیا

مملکت میں اب تقریباً امور ڈیجیٹل سروس میں داخل ہوچکے ہیں، خروج وعودہ پر جانے کے لیے پاسپورٹ کی مدت اور دیگر معاملات سسٹم میں فیڈ ہیں۔ پاسپورٹ ایک بین الاقوامی سفری دستاویز ہے جس کا سفر کے وقت کارآمد ہونا لازمی ہے اگر کسی کا پاسپورٹ ایکسپائر ہو تو بین اقوامی سفری قانون کے مطابق اسے امیگریشن کا ادارہ قبول نہیں کرتا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں