The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس، بچوں کے پھیپھڑوں کو کس طرح تباہ کرتا ہے؟ تہلکہ خیز تصاویر

نیویارک: امریکی ڈاکٹرز نے کرونا سے متاثر ہونے والے کم عمر مریضوں کے سی ٹی اسکین جاری کیے جس میں دکھایا گیا ہے کہ وائرس بچوں کے پھیپھڑوں پر کس طرح سے اثر انداز ہوتا ہے۔

ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق  امریکا کے بوسٹن چلڈرن اسپتال کے ڈاکٹرز نے کرونا سے متاثر ہونے والے 20 بچوں کے سی ٹی اسکین کیے جس میں کرونا کو پھیپھڑوں پر اثر انداز ہوتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

ماہرین کے مطابق سی ٹی اسکین کے نتائج اُن کی سوچ سے زیادہ خطرناک ثابت ہوئے ہیں کیونکہ جس طرح وائرس نے بچے کے پھیپھڑوں کو متاثر کیا اُس سے اندازہ ہوتا ہے کہ وائرس بہت مضبوطی کے ساتھ بچوں کے دیگر اعضاء کو بھی متاثر کرسکتا ہے۔

ماہرین کی جانب سے جاری سی ٹی اسکین رپورٹ میں دیکھا جاسکتا ہے کہ جن بچوں کے پھیپھڑوں میں وائرس موجود ہیں انہیں سانس لینے میں بہت زیادہ دشواری کا سامنا ہے، پھیپھڑوں میں انفیکشن کو واضح طور پر دیکھا جاسکتا ہے جبکہ وائرس کی وجہ سے بچوں کے ٹشوز بھی متاثر ہوئے ہیں۔

Boston Children's Hospital evaluated CT scans from paediatric cases of COVID-19 to see the most common features. Pictured: A 16-year-old girl with COVID-19 who presented with shortness of breath. Her CT images show ground-glass opacity with some consolidation

طبی ماہرین کے مطابق نوجوانوں کے مقابلے میں وائرس سے بچوں کے پھیپھڑے کم متاثر ہوئے مگر اُن کا مدافعتی نظام کمزور ہونے کی وجہ سے صورت حال خراب ہوئی۔

ماہرین کے مطابق سارس اور میرس وائرس بھی اسی طرح بچوں کے نظام تنفس کو متاثر کرتے ہیں، انہیں نزلہ ہوتا ہے جو پھیپھڑوں کو متاثر کرتا ہے۔

In one study of 20 children, almost two-thirds had ground-glass opacity, an indication of widespread inflammation. Pictured: A, 14-year-old girl. B, a boy, 10 years old. C, a one-year-old boy

ڈاکٹرز کی جانب سے جو سی ٹی اسکین رپورٹس جاری کی گئیں اُن میں سے 1.7 فیصد بچوں کو کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی۔

ڈاکٹر فورسٹ کے مطابق ہم نے بچوں کے پھیپھڑوں پر اثر انداز ہونے کے حوالے سے پانچ مطالعاتی تحقیقات کیں جن کے نتائج امریکن جنرل آف روئینٹ گینولوجی میں شائع کیے گئے۔

A, Male, 3 years old. B, Female, 8 years old. C, Male, 14 years old. Underneath are the same patients with signs of recovery

تمام ہی تحقیقی مطالعوں میں یہ بات سامنے آئی کہ بچوں کے پھیپھڑے غیر معمولی حرکت کررہے تھے اور وہ شدید متاثر بھی ہوئے تھے، عام طور پر 1 سے 14 سال کے بچے وائرس سے زیادہ متاثر ہوئے جن میں سے 13 لڑکے تھے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں