The news is by your side.

Advertisement

سزا یافتہ شخص برطانیہ میں کس ویزے پرداخل ہوا؟

لندن: برطانوی وزیرداخلہ پریتی پاٹیل نے عدالت سے سزا یافتہ شخص کے برطانیہ میں داخل ہونے کے معاملے پر تبصرے سے گریز کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اےآروائی نیوزنے برطانوی وزیرِداخلہ پریتی پاٹیل سےسوال کیا کہ پاکستانی عدالت سےسزایافتہ شخص کوداخلےکی اجازت کیسےدی گئی؟ جس پر وزیرداخلہ کےپریس افسرنے جواب دیا کہ انفرادی کیس پرتبصرہ نہیں کرتے۔

واضح رہے کہ برطانوی قانون کے تحت سزایافتہ شخص کوبرطانیہ آمدسےپہلےبتاناہوتاہے تاہم سابق وزیراعظم نوازشریف عدالت سے سزا یافتہ ہونے کے باوجودبغیر کسی روک ٹوک کے لندن میں موجود ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: نواز شریف ملک کا اثاثہ ہیں، اللہ انہیں صحت دے، شہباز شریف

دوسری جانب نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کا کہنا ہے کہ میاں صاحب کےعلاج کاپراسس شروع ہوگیاہےان کاعلاج کہاں ہوگاابھی کچھ نہیں کہا جا سکتا، چیزیں سامنےآنےکےبعدلندن یاامریکا میں علاج کرانے کافیصلہ ہوگا۔

قبل ازیں نوازشریف لندن میں اپنی رہائش گاہ سے گائز اسپتال روانہ ہوئے تھے۔گائز اسپتال برطانوی ادارےاین ایچ ایس کے تحت کام کرتا ہے۔

گائزاسپتال 400 بیڈزپرمشتمل ہےجو3سوسال قبل قائم ہوا، 1721میں تعمیرکئےگئےاسپتال کانام گائےتھامس کےنام پررکھاگیا جب کہ گائزاسپتال کی عمارت لندن کی بلند ترین عمارتوں میں سے ایک ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں