The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب نہ لوٹنے والوں کا اب کیا ہوگا؟

ریاض: سعودی محکمہ پاسپورٹ وامیگریشن(جوازات) نے خروج وعودہ پر جاکر مقررہ وقت پر نہ لوٹنے والوں کے حوالے سے وضاحت پیش کی ہے۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق جوازات کے ٹوئٹر ہینڈل پر اقامہ کے حوالے سے ایک شخص نے دریافت کیا کورونا وبا کے باعث مقررہ وقت پر واپس نہ جانے والوں کا کیا ہوگا، کیا انہیں اقامہ تجدید کی فیس ادا کرنا ہوگی؟۔

جوازات نے وضاحت پیش کی کہ سعودی حکومت نے کورونا وبا کے باعث پڑنے والے معاشی اثرات کو کم کرنے کے لیے ایسے اقامہ ہولڈر غیر ملکیوں کے اقامے اور خروج وعودہ کی مدت میں وقتاً فوقتاً مفت توسیع کے احکامات صادر کیے تھے جن پر مرحلہ وار عمل درآمد جاری ہے۔

محکمہ پاسپورٹ نے بتایا کہ اقاموں اور خروج وعودہ کی مدت میں آخری توسیعی احکامات کے تحت 30 نومبر تک مملکت سے خروج وعودہ پر گئے ہوئے تارکین کے اقاموں اور خروج وعودہ کی مدت میں مفت توسیع کی جا رہی ہے۔

سعودی محکمہ نے یہ بھی کہا کہ جوازات کی جانب سے تارکین کو اقاموں اور خروج وعودہ کی اختیاری توسیع کی بھی سہولت فراہم کی گئی ہے، اختیاری توسیع کے لیے آجر کے ابشر یا مقیم پورٹل کے ذریعے مقررہ فیس ادا کرنے کے بعد توسیع کرائی جا سکتی ہے، یہ اقدام سفری پابندی کے تحت ریلیف کے لیے اٹھایا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں