The news is by your side.

Advertisement

امریکا میں کرونا وائرس کب پھیلا؟ نیا انکشاف

واشنگٹن: امریکی طبی ماہرین نے کہا ہے کہ کرونا وائرس دسمبر 2019 میں امریکا میں پھیلنا شروع ہو گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق امریکا میں کو وِڈ 19 بہت پہلے پھیلنا شروع ہو گیا تھا، سی ڈی سی نے خون کے ہزاروں نمونوں کی جانچ کے بعد اس خیال کو تقویت عطا کی ہے کہ کرونا وائرس 2020 سے قبل پھیلنا شروع ہو چکا تھا۔

بیماریوں کے کنٹرول مرکز CDC اور نیشنل انسٹیٹیوٹ آف ہیلتھ نے اس سلسلے میں نئے تحقیقی مطالعے کیے، اداروں کا کہنا ہے کہ گزشتہ سال 24 ہزار امریکیوں سے لیے جانے والے خون کے نمونوں کے جامع جائزے کے نتیجے میں کو وِڈ 19 کی دسمبر 2019 میں ملک کے بعض علاقوں میں موجودگی کے بارے میں یقین قوی ہوتا جا رہا ہے۔

واضح رہے کہ امریکا میں سرکاری طور پر پہلا تصدیق شدہ کرونا وائرس کیس 19 جنوری 2020 کو سامنے آیا تھا۔

سی ڈی سی کی اہم محقق نتالی تھورنبرگ نے اپنے بیان میں کہا کہ ہمارے ان تحقیقی مطالعات میں ایک تواتر رہا ہے، جس کی وجہ سے اس کی درستگی کا بہت امکان ہے، اور قوی احتمال ہے کہ کرونا وائرس ہمارے علم میں آنے سے بہت پہلے پھیلنا شروع ہو گیا تھا۔

خیال رہے کہ نیا کرونا وائرس 2019 کے اواخر میں چین کے شہر ووہان سے پھوٹا تھا، اور 15 جنوری کو ووہان سے امریکا واپس لوٹنے اور واشنگٹن کے ایک کلینک میں زیر علاج رہنے والے امریکی کو ملک میں کرونا وائرس کا پہلا کیس قبول کیا جاتا ہے۔

دوسری طرف اس تجزیے کو بھی قطعی نہیں سمجھا جا رہا ہے، چند امریکی ماہرین کو ابھی بھی اس سے متعلق شک ہے، تاہم وفاقی صحت حکام اس ٹائم لائن کو قبول کرنے کی طرف زیادہ مائل ہوتے جا رہے ہیں، جس کے تحت نئے کرونا وائرس کے چند کیسز اس وقت امریکا میں واقع ہو چکے تھے جب دنیا ابھی چین سے پھوٹتے اس خطرناک وائرس سے واقف بھی نہ ہوئی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں