راحیل شریف عہدے پر تھے تو حکومتی لوگ چھپتے تھے، چانڈیو Raheel Shareef
The news is by your side.

Advertisement

راحیل شریف عہدے پر تھے تو حکومتی لوگ چھپتے تھے، چانڈیو

لالہ موسیٰ: مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ جب راحیل شریف عہدے پر تھے تو حکومت کے لوگ اُن سے چھپتے رہتے تھے، مسلم لیگ ن کی روایت ہے کہ وہ جانے والے کو گالیاں دیتے ہیں، گورنر سندھ بڑے آدمی ہیں جو چاہیں بول سکتے ہیں۔

لالہ موسیٰ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ حکومت کو پاناما لیکس کے فیصلے نے پاگل کردیا ہے، اس لیے اب مسلم لیگ ن کو ہماری سیاست اور پنجاب آنے پر اعتراض ہورہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی وفاق کی جماعت ہے اور اُس نے پنجاب سے ہی جنم لیا، دیگر سیاسی جماعتیں صوبائی حد تک محدود ہیں۔ پی پی عوام میں تیزی سے مقبول ہورہی ہے اس لیے ن لیگ کا ایم این اے دوبارہ ہمارے پاس آگیا۔

پڑھیں: ’’ راحیل شریف ایک عام جنرل تھے، کراچی میں تبدیلی نواز شریف کے آنے سے آئی، گورنر سندھ ‘‘

مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ جب راحیل شریف عہدے پر تھے تو حکومت کا کیا حال تھا یہ کسی سے ڈھکا چھپا نہیں، طالبان کی چھتری کے نیچے الیکشن جیتنے والے راحیل شریف سے ہر کام کی اجازت لیتے تھے مگر مسلم لیگ نے اپنی روایت کو برقرار رکھتے ہوئے راحیل شریف کے خلاف غلط زبان استعمال کرنا شروع کردی۔

ایم کیو ایم کی جانب سے وائٹ پیپر جاری کرنے کے حوالے سے مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ متحدہ کے خلاف ہر ادارہ وائٹ پیپر جاری کرچکا ہے، ایسی جماعت اور اُس کے وائٹ پیپر کی عوام میں کوئی اہمیت نہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں