The news is by your side.

Advertisement

اقوام متحدہ اجلاس میں امریکی، ایرانی صدور کی ملاقات خارج از امکان نہیں، وائٹ ہاﺅس

واشنگٹن:وائٹ ہاوس نے کہا ہے کہ امریکا کی جانب سے ایران پر سعودی عرب کی تیل کمپنی پر ڈرون حملے کے الزام کے بعد صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور صدر حسن روحانی کے مابین ملاقات خارج از امکان نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق وائٹ ہاوس کی مشیر کیلیانی کونوے نے بتایا کہ حملوں کی وجہ سے دونوں ممالک کے صدور کے مابین اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ملاقات مدد گار ثابت نہیں ہوں گی،ساتھ وہی وائٹ ہاوس کی مشیر نے کہا کہ امکان ہے کہ ملاقات بھی جائے۔

انہوں نے کہا کہ میں امریکی صدر سے کہوں گی کہ وہ ملاقات ہونے یا نہ ہونے سے متعلق اعلان کریں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ٹرمپ انتظامیہ کی جانب سے ایران کے جوہری اور بیلسٹ میزائل پروگرام پر اقتصادی پابندیوں کا سلسلہ جاری ہے گا چاہیے دونوں رہنماوں کی ملاقات ہو یا نہیں ہو۔

ترجمان وائٹ ہاوس نے کہا کہ سعودی عرب پر حملہ کرکے ایران اپنے مقدمے میں خود مدد نہیں کررہا۔

خیال رہے کہ اقوام متحدہ میں ایرانی سفیر ماجد تخت عروانچی نے کہا تھاکہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ سے قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن کی رخصتی کے بعدبھی ایران امریکا سے مذاکرات کی بحالی پر نظرثانی نہیں کرے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں