The news is by your side.

Advertisement

چکن گونیا کی وبا بے قابو، عالمی ادارہ صحت کی 9رکنی ٹیم کی کراچی آمد

کراچی:  چکن گونیا کےمریضوں کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے، چکن گنیا سےمتعلق عالمی ادارہ صحت کی نو رکنی ٹیم بھی کراچی پہنچ گئی، ٹیم چکن گونیا کے مرض کیخلاف فنی معاونت فراہم کرے گی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے اسپتالوں میں چکن گونیا کے مریضوں کی تعداد بڑھنے لگے، چکن گونیا سے متعلق عالمی ادارہ صحت کی نو رکنی ٹیم بھی کراچی پہنچ گئی، ٹیم چکن گنیا کے مرض کیخلاف فنی معاونت فراہم کرے گی۔

ڈائریکٹر ہیلتھ کے دفترمیں چکن گونیا سے متعلق اجلاس ہوا، اجلاس میں عالمی ادارہ صحت کی ٹیم کو چکن گنیا سے متعلق آگاہی دی گئی، ڈائریکٹر ہیلتھ کی درخواست پر عالمی ادارہ صحت کی ٹیم کراچی کا دورہ کر رہی ہے۔

ڈائریکٹرہیلتھ کا کہنا تھا کہ عالمی ادارہ صحت کی ٹیم کل مختلف علاقوں کا دورہ کرے گی۔

یاد رہے کہ ڈائریکٹر ہیلتھ کراچی نے عالمی ادارے صحت کو خط لکھا تھا کہ جس میں چکن گونیا سے متعلق آگاہی اورمریضوں کےعلاج کیلئے مدد کی درخواست کی تھی۔


مزید پڑھیں : چکن گونیا کی وبا، عالمی ادارے صحت کا وفد منگل کو کراچی پہنچے گا


ڈائریکٹر ہیلتھ نے خط لکھا تھا کہ عالمی ادارہ صحت چکن گونیا کے خاتمے میں مدد اور اقدامات کرے ، عالمی ادارہ صحت کی جانب سے ڈائریکٹرہیلتھ کے خط کا مثبت جواب بھی موصول ہوا تھا۔

واضح رہے کہ کراچی میں اب تک ڈھائی سو سے زائد چکن گونیا مریضوں کی تصدیق ہوچکی ہے۔

واضح رہے کہ سندھ اسمبلی کے اجلاس میں  صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر سکندر میندھرو کا کہنا تھا کہ چکن گونیا ایک وائرل بیماری ہے اور وائرل بیماری سے بچنے کے لیے ویکسین کی جاتی ہے ، مگر چکن گونیا کے حوالے سے اب تک دنیا میں کوئی بھی ویکیسن دریافت نہیں ہوئی ہے ۔

صوبائی وزیر صحت نے بتایا تھا کہ دسمبر 2016 میں اس مرض کا انکشاف ملیر کے علاقے سعود آباد میں ہوا اور صرف سعود آباد کی حدود میں 63 ہزار افراد اس مرض کا شکار ہوئے جبکہ کورنگی ، اورنگی اور کچھ دیگر علاقوں میں بھی اس طرح کے مریض سامنے آئے ۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں