The news is by your side.

Advertisement

اے آر وائی نیوز کے پروگرام میں‌ وقار یونس نے پی سی بی کاکچاچٹھہ کھول دیا

کراچی: قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ وقار یونس کا اے آر وائی کو خصوصی انٹرویو ہیڈکوچ وقاریونس پی سی بی پربرس پڑے انہوں نے کہا کہ کیا افغانستان سے ہاریں گے تب ہوش آئے گا۔

اےآروائی نیوز کے پروگرام ایلونتھ آر میں اینکر پرسن وسیم بادامی کو خصوصی انٹریو دیتے ہوئے پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ وقار یونس کا کہنا تھا کہ مجھے نکالنا ہے تو بتادیں چلاجاؤں گا،ایساہی چلتارہاتودوسال بعد کوئی اور کوچ شکایت کررہاہوگا۔

وقاریونس نے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ میں مسائل ہیں، حل ڈھونڈنا ہوگا،مجھےکالی بھیڑکہنےوالوں کو شرم آنی ہے۔ انہوں نے پی سی بی میں قابض ٹولے کی اہلیت پر سوال اٹھادیا کہا کہ مسئلہ پی سی بی میں ہے صرف دو لوگ پروفیشنل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ رپورٹ لیک ہونابہت بڑا جرم ہے، جس نے میری رپورٹ لیک کی اسے سزادینی چاہیے، رپورٹ لیک ہونے پرتکلیف ہوئی،رپورٹ لیک ہوناپی سی بی کی ناکامی ظاہرکرتاہے۔

ہیڈ کوچ نے بتایا کہ نجم سیٹھی نےہیڈ کوچ رکھا اب ڈیڑھ سال سے میرا فون نہیں اٹھاتے، جبکہ وفاقی وزیر سے ملنا میرا حق ہے،انہوں نے کہا کہ 2015میں دی گئی میری رپورٹ پر عملدرآمد نہیں ہوا۔

وقار یونس نے کہا کہ پاکستان میری پہچان ہے، ہمیشہ ملک کی بہتری کا سوچا، مجھے میرٹ پر کوچ رکھا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں