The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں ایک امریکی شہری کی ویڈیو کیوں وائرل ہوگئی

ریاض: کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے سعودی اقدامات کی تعریف پر مبنی امریکی شہری کی ویڈیو نے لوگوں کو حیران کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق سعودی دارالحکومت ریاض میں مقیم امریکی شہری نے کرونا وائرس کی روک تھام کے سلسلے میں سعودی اقدامات کی تعریف پر مبنی ایک ویڈیو بنائی، جو سوشل میڈیا پر بہت تیزی سے وائرل ہو گئی۔

ویڈیو کلپ میں امریکی شہری محمد موفلود نے کہا ‘سعودی عرب کرونا وائرس سے نمٹنے کے لیے چھوٹی چھوٹی باتوں کا خیال کر رہا ہے.’

امریکی شہری نے ویڈیو میں کہا کہ وہ کرونا وبا کے دوران سعودی عرب میں قیام پر خود کو خوش قسمت سمجھ رہے ہیں، کیوں کہ حکومت کسی استثنیٰ کے بغیر ہر بات کا خیال رکھ رہی ہے، یہ سعودی حکومت کا ایک شان دار کارنامہ ہے۔

ویڈیو میں امریکی شہری نے ہاتھ اٹھا کر دعا بھی کی، انھوں نے اللہ کو پکارا، کرونا وبا دور کر دے اور مملکت سعودی عرب کی پاسبانی کر۔

واضح رہے کہ سعودی عرب کے تمام سرکاری اور نجی اسپتالوں کو سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبد العزیز کی جانب سے حکم ہے کہ کرونا کے انفیکشن میں مبتلا ہر مریض کا مفت علاج کیا جائے، سعودی شہریوں اور غیر ملکیوں کے درمیان علاج کے سلسلے میں کوئی امتیاز نہ برتا جائے۔

اسپتالوں کو یہ حکم بھی دیا گیا ہے کہ غیر قانونی طور پر مقیم غیر ملکیوں کو بھی کرونا وائرس کے حوالے سے تمام سہولتیں مفت مہیا کی جائیں، آنے والے کسی مریض سے شناختی کارڈ طلب نہ کیا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں