ملالہ یوسف زئی کا نام ’ملالہ‘ کیوں رکھا گیا: ڈاکیومنٹری -
The news is by your side.

Advertisement

ملالہ یوسف زئی کا نام ’ملالہ‘ کیوں رکھا گیا: ڈاکیومنٹری

امن کے لئے نوبل انعام یافتہ ملالہ یوسف زئی سے تو سب ہی واقف ہیں لیکن بہت کم افراد یہ بات جانتے ہیں کہ ملالہ کا نام 19ویں صدی کی ایک بہادر افغان لڑکی کے نام پر رکھا گیا ہے۔

پشتون روایات کے مطابق میوند کی ملالائی 1880 میں برطانوی افواج سے نبد آزما ہونے والے ہم وطنوں کی حوصلہ افزائی کیا کرتی تھی اوراس مقصد کے لئے محاذ جنگ پر بھی جایا کرتی تھی جہاں ایک دن وہ گرفتار ہوئی اور ماری گئی۔

ملالہ یوسف زئی پر 2012 میں اسکول جاتے ہوئے طالبان نے حملہ کرکے انہیں قتل کرنے کی کوشش کی تھی، ملالہ اب 18 سال کی ہوچکی ہیں اوران پر بننے والی ایک نئی ڈاکیومنٹری میں پشتون روایات کے اس تاریخی کردار کو بھی اجاگر کیا گیا ہے۔

مذکورہ دستاویز کی فلم بندی 18 ماہ میں مکمل کی گئی ہے اور اس میں دکھایا گیا ہے کہ نوجوان ملالہ کس طرح اقوام متحدہ کے ہیڈکوارٹر میں یا شام میں مہاجرین سے خطاب کے وقت پر اعتماد ہوتی ہیں۔

 ڈاکیومنٹری میں یہ بھی دکھایا گیاہے کہ ملالہ اپنی تمام ترشہرت کے باوجودایک عام لڑکی ہے جسے اسکول میں مسائل ہوتے ہیں، جو کہ اپنے بھائیوں سے ہنسی مذاق کرتی ہے اور کسی لڑکے سے متعلق پوچھے گئے سوال پر شرماجاتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں