The news is by your side.

Advertisement

بندر نے پلّا اغوا کر لیا (ویڈیو)

کوالالمپور: ملائیشیا میں ایک جنگلی بندر نے پلّے کو ‘اغوا’ کر کے لوگوں کو حیران کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق ملائیشیا کے ایک علاقے میں جنگلی بندر نے سارو نامی ایک پلّے کو اغوا کر کے 3 دن تک ‘یرغمال’ بنائے رکھا۔

میڈیا رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ ایک پلّے کو ڈرامائی طور پر بندر کے ‘قبضے’ سے بازیاب کرایا گیا ہے، پلّا سیاہ اور سفید رنگ تھا اور اس کی عمر 2 ہفتے تھی۔

جنگلی بندر پلّے کو 16 ستمبر کو چھین کر لے گیا تھا، اور اسے بجلی کی ایک اونچی پوسٹ پر لے جا کر تین دن تک رکھا، لوگوں نے جب دیکھا کہ بندر نے پلّے کو یرغمال بنا کر رکھا ہوا ہے تو کافی سارے لوگ بجلی کے پوسٹ کے نیچے اکھٹے ہو گئے۔

مقامی لوگوں کا کہنا تھا کہ کتے کا پلّا لاغر دکھائی دے رہا تھا، تاہم بندر نے اسے کوئی تکلیف یا نقصان نہیں پہنچایا، بندر نے بس ادھر ادھر جاتے ہوئے اسے پکڑے رکھا۔

ایسا لگ رہا تھا کہ جیسے بندر اسے اپنے بچے کی طرح ساتھ لگائے رکھ رہا ہے، لوگوں کے بیان کے مطابق یہ بہت عجیب برتاؤ تھا، تاہم اسے بچایا جانا ضروری تھا کیوں کہ وہ بھوک سے مر سکتا تھا۔

رپورٹس کے مطابق جب مقامی لوگ دو دن تک پلّے کو بچانے کی کوششیں کر رہے تھے تو پلّے کو لے کر بندر کبھی بجلی کی تاروں اور کبھی درختوں پر دوڑ بھاگ کرتا رہا، لوگوں نے بندر کو کھانے کی چیزیں دے کر للچایا بھی لیکن اس ترکیب نے کام نہ کیا۔

آخر کار تیسرے دن مقامی لوگوں کو بندر کو پتھر مار کر اتنا ڈرایا کہ اس نے پلّے کو چھوڑ دیا اور وہ نیچے جھاڑیوں میں گرا اور بندر بھاگ گیا، تاہم اس آپریشن میں کوئی بھی زخمی نہ ہوا، نہ بندر اور نہ ہی پلّا۔

مقامی لوگوں کے مطابق یہ بندر بہ ظاہر اس گینگ کا حصہ تھا جو آس پاس کے گھروں سے خوراک چوری کرتا ہے۔ پلّے کو ایک مقامی شخص اپنے ساتھ گھر لے گیا اور اسے کھلایا پلایا۔ سارو نامی اس پلّے کو ایک آوارہ کتیا سے چھینا تھا بندر نے، جسے اب ایک شخص نے اپنا پالتو بنا لیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں