The news is by your side.

Advertisement

موسمِ سرما: جِلد کا خیال رکھیے

جلد (skin) انسانی جسم کا سب سے طویل حصّہ اور اس کی محافظ ہے۔ یہ لچک دار اور اہم ترین عضو ہے جس کے مختلف کام ہیں جن میں جسم کو موسمی اثرات سے محفوظ رکھنا، اسے نقصان دہ جراثیم، سورج کی تیز شعاعوں اور خطرناک روشنیوں کے اثرات سے بچانا شامل ہے۔

جِلد ہماری خوب صورتی میں‌ اضافہ کرتی ہے۔ اس کی صفائی کا خیال رکھنے اور اسے تروتازہ رکھنے سے ہماری شخصیت میں نکھار پیدا ہوتا ہے۔ موسمِ‌ سرما میں جلد کی بعض عام شکایات اور مسائل بھی سامنے آتے ہیں جن میں‌ جلد کا خشک، کھردرا یا سخت ہونا، خارش اور جلد کا بے رونق ہو جانا شامل ہیں۔ اس اہم عضو سے متعلق چند بنیادی آپ کی معلومات میں‌ اضافہ کریں گی۔

ہماری بیرونی کھال کو ماہرین نے ایپی ڈرمِس (epidermis) کا نام دیا ہے جو جلد کے مردہ خلیوں کی جگہ نئے خلیے پیدا کرنے میں مدد دیتی ہے۔ ہماری جلد کی گہری پرت سب کیوٹس (subcutis) کہلاتی ہے جو چکنائی کو اپنے اندر ذخیرہ کرتی ہے کہ وہ چوٹ لگنے، زخمی ہونے پر ہمارے مسلز اور ہڈیوں کی حفاظت کرسکے۔

انسانی جلد پر انتہائی باریک سوراخ ہوتے ہیں جنھیں ہم مسام (pores) کہتے ہیں اور انہی سے دھول، مٹی، گرد و غبار اور جراثیم جسم میں داخل ہوتے ہیں جو بیماریوں کا سبب بنتے ہیں۔ ہماری جلد یا کھال ہی میں ہمارے بالوں کی جڑیں بھی ہوتی ہیں۔

موسمِ‌ سرما میں ہمارے پیروں کی جلد پھٹنے اور انگلیوں کی کھال اترنے کا مسئلہ بھی سامنے آتا ہے جس کا ایک سبب جسم میں نمی یا پانی کی ضروری اور مناسب مقدار کم ہوجانا ہے۔

طبی ماہرین کے مطابق سردیوں میں جلد کی حفاظت کے لیے معیاری لوشن استعمال کرنے کے علاوہ زیادہ پانی پینا چاہیے اور اس بات کو یقینی بنانا چاہیے کہ جلد کی نشوونما اور اس کے ٹھیک طریقے سے کام کرنے کے لیے اسے مطلوبہ مقدار میں پانی ملتا رہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں