گیس کی قیمتوں میں اضافہ، کراچی کے مختلف علاقوں میں سی این جی اسٹیشنز بند ہونا شروع
The news is by your side.

Advertisement

گیس کی قیمتوں میں اضافہ، کراچی کے مختلف علاقوں میں سی این جی اسٹیشنز بند ہونا شروع

کراچی: حکومت کی جانب سے گیس کی قیمتوں میں اضافے کے اعلان کے بعد شہر قائد کے مختلف علاقوں میں سی این جی اسٹیشنز بند ہونا شروع ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت نے گیس کی قیمتوں میں اضافہ کیا تو شہر قائد کے مختلف علاقوں میں سی این جی اسٹیشنز بند ہونا شروع ہوگئے، سی این جی اسٹیشنز بند ہونے سے پبلک، پرائیویٹ ٹرانسپورٹ کو مشکلات کا سامنا ہورہا ہے۔

چیئرمین سی این جی ایسوسی ایشن شبیر سلیمان نے کہا ہے کہ سی این جی کی قیمتوں میں اضافے کو مسترد کرتے ہیں، حکومت نے 27 ستمبر سے قیمتوں میں اضافے کا نوٹیفکیشن جاری کیا ہے، 27 ستمبر سے نئی قیمتیں لاگو کرنے سے پمپ مالکان کا کروڑوں روپے کا نقصان ہوگیا۔

شبیر سلمان کا کہنا ہے کہ نوٹیفکیشن سے ایک سی این جی پمپ کو 4 سے 6 لاکھ کا نقصان ہوگیا ہے، سی این جی کی قیمتوں میں اضافے کے بعد کاروبار کرنا ممکن نہیں رہا، نقصان میں کاروبار نہیں کرسکتے، سی این جی اسٹیشنز بند کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

مزید پڑھیں: حکومت نے گیس کی قیمتوں میں ہوش ربا اضافہ کردیا

واضح رہے کہ حکومت کی جانب سے سی این جی صارفین کے لیے بھی گیس 40 فیصد مہنگی کردی گئی ہے، کے پی، بلوچستان میں سی این جی 20 روپے فی کلو تک مہنگی ہوگی، کمرشل اور تندور کنکشن ہر گیس 40 فیصد تک مہنگی دی جائے گی۔

دوسری جانب گیس کی قیمتوں میں اضافے پر سی این جی ایسوسی ایشن کا ردعمل سامنے آیا ہے، غیاث پراچہ نے کہا کہ سی این جی کے لیے گیس کی قیمت بڑھا کر غریب عوام سے زیادتی کی گئی ہے، حکومت فیصلے پر نظرثانی کرکے سی این جی کی قیمتوں میں کمی کرے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے عوام کو ریلیف کے لیے پیٹرول کی قیمتیں نہیں بڑھائیں، اضافہ سمجھ سے بالاتر ہے، سی این جی بھی تو عوام استعمال کرتے ہیں، نئے نرخ سے سی این جی میں تقریباً 15 روپے کا اضافہ متوقع ہے، اضافہ 27 ستمبر سے کیا گیا، یہ پیسے عوام سے کیسے وصول کیے جائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں