The news is by your side.

Advertisement

الیکشن کمیشن کے 2ممبران کی تعیناتی کا معاملہ، حکومت کو مزید مہلت مل گئی

اسلام آباد: اسلام آباد ہائی کورٹ میں الیکشن کمیشن کے 2 ممبران کی تعیناتی سے متعلق درخواست پر سماعت ہوئی، عدالت نے حکومت کو مزید 10 دن کی مہلت دے دی۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے الیکشن کمیشن کے 2ممبران کی تعیناتی سے متعلق درخواست پر سماعت کی، اسلام آباد ہائیکورٹ بار کی کال پر آج بھی کوئی وکیل پیش نہیں ہوا، البتہ ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل سردار مظفر عباسی عدالت میں پیش ہوئے۔

درخواست گزاروں کی جانب سے بھی کوئی پیش نہ ہوا، جبکہ سیکریٹری قومی اسمبلی عدالت میں پیش ہوئے اور عدالت سے دس دن کی مزید مہلت مانگی، انہوں نے عدالت میں استدعا کی کہ الیکشن کمیشن کے دو ممبران کی تعیناتی سے متعلق جواب دینے کے لیے 10دن کا وقت چاہیے۔

الیکشن کمیشن کے دونئے ممبران کی تعیناتی کا صدارتی نوٹیفکیشن معطل

جس پر چیف جسٹس ہائیکورٹ اطہرمن اللہ نے کہا کہ عدالت کو پارلیمنٹ پر اعتماد ہے اور حکومت کو مزید دنوں کے لیے مہلت دے دی۔ اسلام آبادہائیکورٹ نے سماعت31دسمبر تک ملتوی کر دی۔

خیال رہے کہ 5 دسمبر کو پاکستان تحریک انصاف کے رہنما بابر اعوان نے کہا تھا کہ الیکشن کمشن کے ممبران کی تقرری نہ ہونے کے ذمہ دار شہباز شریف ہیں، ریٹائرڈ جج نورالحق قریشی کا نام دونوں طرف سے آیا، ان کے نام پر اتفاق تھا مگر اعلان نہیں کیا گیا، الیکشن کمیشن ممبران کا فیصلہ کرنا پارلیمانی کمیٹی کا اختیار ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں