The news is by your side.

Advertisement

زیادتی اور دہشت گردی کے مقدمات میں گواہوں کے تحفظ کے لیے اہم اقدام

پشاور: صوبہ خیبر پختونخواہ میں زیادتی اور دہشت گردی کے مقدمات میں گواہوں کے تحفظ کے لیے قانون تیار کرنے کا بل تیار کرلیا گیا، بل میں کہا گیا ہے کہ گواہوں کی حفاظت یقینی بنانے کے لیے پروٹیکشن یونٹ بنایا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق خیبر پختونخواہ میں زیادتی اور دہشت گردی کے مقدمات میں گواہوں کے تحفظ کے لیے قانون تیار کیا جارہا ہے، صوبائی وٹنس پروٹیکشن ایکٹ 2021 اسمبلی اجلاس کے ایجنڈے میں شامل کرلیا گیا۔

مجوزہ بل میں کہا گیا ہے کہ زیادتی اور دہشت گردی کے مقدمات کے گواہوں کو تحفظ فراہم کیا جائے گا، سیکریٹری داخلہ کی سربراہی میں 7 رکنی وٹنس پروٹیکشن بورڈ قائم کیا جائے گا۔

بل میں کہا گیا ہے کہ بورڈ کی ذمہ داری پالیسی گائیڈ لائنز اور مانیٹرنگ کرنا ہوگی، گواہوں کی حفاظت یقینی بنانے کے لیے پروٹیکشن یونٹ بنایا جائے گا۔ یونٹ عدالتی کیس کی نوعیت کے مطابق گواہ کی سیکیورٹی کا تعین کرے گا۔

بل کے مطابق گواہ کی جان و مال کا تحفظ یونٹ کی ذمہ داری ہوگی، حالات کے پیش نظر گواہ کو محفوظ مقام پر منتقل کیا جائے گا، گواہ کو مالی تعاون دینا بھی وٹنس پروٹیکشن یونٹ کی ذمہ داری ہوگی۔

بل میں کہا گیا کہ گواہوں کی جانچ پڑتال اور تصدیق بھی وٹنس پروٹیکشن یونٹ کرے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں