The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب کے صحرا میں رہنے والی یہ خاتون کون ہیں؟

تبوک: سعودی عرب میں ایک خاتون 35 برس سے صحرا میں رہائش پذیر ہیں، ان کے طرز زندگی نے لوگوں کو حیران کر دیا ہے۔

ایک خلیجی چینل کے پروگرام ’سیدتی‘ میں ایک سعودی خاتون قسمہ العطوی کی صحرائی زندگی کے بارے میں رپورٹ پیش کی گئی ہے، جس میں بتایا گیا کہ خاتون 35 برس قبل شہر سے تبوک کے صحرا میں منتقل ہو گئی تھیں، کیوں کہ شہر کی مصنوعی زندگی سے دور ایک حقیقی زندگی جینا چاہتی تھیں۔

قسمہ العطوی نے بتایا کہ حقیقی زندگی تو صحرا کی ہے، نئی نسل اس کا لطف اٹھائے، کھانے پینے، رہنے سہنے اور گزر بسر کے تمام انتظامات خود کر کے زندگی گزارنے کا جو مزہ ہے وہ شہری زندگی میں سوچا بھی نہیں جا سکتا۔

سعودی خاتون کا کہنا ہے کہ صحرا میں رہ کر ایسا محسوس ہوتا ہے کہ حقیقی آزادی والی زندگی یہی ہے، ذہنی سکون بھی ملتا ہے، صحرا میں کھانے پینے کا لطف شہروں کے کھانے پینے سے بے حد مختلف ہے۔

قسمہ العطوی نے کہا کہ یہاں زیر استعمال تمام اشیا ان کی اپنی تیار کی ہوئی ہیں، اون وہ خود تیار کرتی ہیں، العطوی نے کہا ‘یہ ہنر میں نے اپنی ماں، دادی اور نانی سے سیکھا ہے۔’

سعودی خاتون کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی ہے، جس میں صحرا کی زندگی میں استعمال ہونے والی اشیا بھی دیکھی جا سکتی ہیں۔

العطوی نے بتایا کہ وہ تمام کام اپنی مرضی سے کرتی ہیں، بکریوں کو چرانا، خیمہ تیار کرنا، نصب کرنا یہ سب کچھ وہ خود اور شوقیہ کرتی ہیں۔

انھوں نے کہا کہ صحرا کی اس زندگی میں اپنا سارا کام خود کر کے انھیں بہت اچھا لگتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں