سکھرجیل حکام کی رشوت ستانی سے تنگ عورت بیٹیاں فروخت کرنے سڑکوں پرآگئی -
The news is by your side.

Advertisement

سکھرجیل حکام کی رشوت ستانی سے تنگ عورت بیٹیاں فروخت کرنے سڑکوں پرآگئی

لاڑکانہ: پولیس کے مظالم سے تنگ آکر ایک مجبورخاتون اپنی بیٹیاں بیچنے کے لئے سڑکوں پرآگئی۔

تفصیلات کے مطابق مذکورہ خاتون کا بھائی اوربیٹا سکھر جیل میں قید ہے اورجیل سپرنٹنڈنٹ نے انہیں لاڑکانہ جیل منتقل کرنے کے لئے دولاکھ روپے رشوت طلب کی ہے۔

خاتون نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اسے اپنے شوہراوربیٹے سے ملنے کے لئے سکھرجانا پڑتا ہے اور اپنی بیٹیوں کے ساتھ اس کے لئے ایسا کرنا ممکن نہیں ہے۔

خاتون نے مزید کہا کہ جب اس نے جیل سپرنٹنڈنٹ سے اپنے شوہراوربھائی کولاڑکانہ جیل منتقل کرنے کی درخواست دی تو اس کام کے لئے بھاری رشوت طلب کی گئی۔

خاتون نے اپنی چاربیٹیوں کی پچاس ہزار روپے فی بیٹی قیمت طلب کی ہے اوراس کا کہنا ہے کہ کوئی بھی انہیں خریدلے تاکہ وہ اپنے شوہراوربیٹے کو لاڑکانہ منتقل کراسکے۔

اس موقع پرخاتون کی ایک بیٹی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مخیرحضرات سے اپیل کرتے ہوئے انتہائی معصومیت سے کہا کہ ’’انکے عوض کوئی ماں کو پچاس ہزارروپے دے دے تاکہ ان کی ماں کی مشکلات کم ہوسکے۔

واضح رہے کہ سندھ کے سرکاری محکموں میں رشوت ستانی اورلاقانونیت عروج پرہے آئے دن اس قسم کے واقعات پیش آتے رہتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں