The news is by your side.

Advertisement

دنیا میں پہلی بار کسی انسان کو 3D کان لگا دیا گیا

پنسلوینیا: دنیا میں کسی انسان کو پہلی بار ایک 3 ڈی پرنٹڈ کان لگا دیا گیا ہے، اور اسے میڈیکل سائنس کی دنیا کا انقلابی قدم قرار دیا جا رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق دنیا میں پہلی بار کسی انسان کو تھری ڈی کان لگایا دیا گیا، نوجوان خاتون اپنے خلیوں سے بَنا تھری ڈی کان لگوانے والی دنیا کی پہلی انسان بن گئی ہیں۔

میسیکو سے تعلق رکھنے والی 20 برس کی الیکسا کان کے ایک نایاب نقص مائیکروٹیا کے ساتھ پیدا ہوئی تھیں، ان کے کان کا بیرونی حصہ مکمل طور پر موجود نہیں تھا، یہ حالت سماعت کو متاثر کر سکتی ہے۔

ڈاکٹر ارٹورو بونِیلا نے الیکسا کے نامکمل کان کو سرجری کے ذریعے ہٹایا اور اس سے آدھا گرام کارٹلیج نکال کر اسے خاتون کے صحت مند کان کے تھری ڈی اسکین کے ساتھ سان انتونیو سے لانگ آئی لینڈ سٹی، کوئنز میں 3DBio تھیراپیوٹکس کو بھیج دیا۔

لیبارٹری میں مریض کے کونڈروسائٹس (وہ خلیات جو کارٹلیج کی تشکیل کرتے ہیں) کو ٹشو کے نمونے سے الگ کر دیا گیا، اور پھر اسے خاص طریقے سے اربوں خلیوں میں تبدیل کیا گیا، ان زندہ خلیوں کو پھر کولاجین پر مبنی بائیو اِنک کے ساتھ ملایا گیا اور تھری ڈی بائیو پرنٹر میں سرنج کے ذریعے ڈال دیا گیا، جس سے کان کا باہری حصہ بنا۔

ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ اس اِمپلانٹ کے اطراف میں گھُل جانے والا خول موجود ہے جو ابتدائی سہارے کے لیے لگایا گیا ہے اور یہ وقت کے ساتھ مریض کے جسم کے اندر جذب ہو جائے گا۔

اس تھری ڈی کان کے پرنٹ ہونے کے عمل میں 10 منٹ سے بھی کم وقت لگا، ڈاکٹروں کو امید ہے یہ ٹرانسپلانٹ طب کی دنیا میں ’مائیکروٹیا‘ میں مبتلا افراد کے لیے علاج سامنے لاکر انقلاب برپا کر دے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں