The news is by your side.

Advertisement

سفاک شوہر کے ہاتھوں باتھ روم میں مقید خاتون ڈیڑھ سال بعد بازیاب

ہریانہ: بھارت کے سفاک شہری نے اپنی بیوی کو ڈیڑھ سال تک باتھ روم میں قید کر کے رکھا جسے اب پولیس نے باحفاظت بازیاب کرلیا ہے۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق ریاست ہریانہ کے علاقے پانی پت میں شوہر نے 35 سالہ بیوی کو ڈیڑھ سال سے 9 اسکوائر فٹ کے باتھ روم میں قید کر کے رکھا ہوا تھا۔

پولیس کو واقعے کی اطلاع ملی تو بھاری نفری کے ہمراہ مذکورہ گھر پر چھاپہ مارا جس کے دوران خاتون کو بازیاب کر کے شوہر کو گرفتار کرلیا گیا۔

ریسکیو حکام کے مطابق ڈیڑھ سال تک چھوٹی سی جگہ پر بند رہنے اور کئی روز سے کھانا نہ ملنے کی وجہ سے خاتون چلنے پھرنے سے قاصر ہیں کیونکہ وہ بہت کمزور ہوگئی ہیں۔

ریسکیو حکام کے مطابق شوہر نے 18 ماہ قبل تلخ کلامی کے بعد خاتون کو باتھ روم میں بند کیا  اور پھر دروازے کو تالا لگا کر چابی اپنے ساتھ لے کر چلا گیا تھا۔

پانی پت پولیس حکام نے بتایا جس باتھ روم میں خاتون کو قید کیا گیا تھا وہ جگہ تین بائی تین فٹ کے رقبے پر مشتمل ہے۔خاتون کے شوہر نریش کمار کو پولیس نے حراست میں لے کر مقدمہ درج کرلیا۔ خاتون نے بتایا کہ انہیں کئی کئی روز تک کھانے، پینے کے لیے کچھ بھی نہیں دیا جاتا تھا۔

رپورٹ کے مطابق خاتون کی شادی 17 سال قبل ہوئی جس کے بعد اُن کے ہاں تین بچوں کی پیدائش ہوئی جن کی عمریں گیارہ سے پندرہ سال کے درمیان ہیں۔

پولیس کو تفتیش کے دوران ملزم نے بیوی کو بند کرنے کا اعتراف کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ اہلیہ ذہنی مریضہ ہیں اور وہ الٹی سیدھی حرکتیں کرتی تھیں جس کی وجہ سے مجبوراً بند کرنا پڑا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں